Delhi دہلی

میں بھی کیجریوال مہم نے واضح کردیا کہ دہلی کی عوام کیجریوال کے ساتھ ہے، عوام نے کہا، کیجریوال کو کسی بھی حال میں استعفیٰ نہیں دینا چاہئے: آپ

کم سے 30 دسمبر تک چلی مہم، AAP 23,82,122 گھروں تک پہنچی، اب 4 جنوری سے چلے گا "میں بھی کیجریوال” عوامی رابطہ مہم: آپ


نئی دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز)دہلی بھر میں عام آدمی پارٹی کی طرف سے شروع کی گئی میں بھی کیجریوال گھر گھر مہم مکمل طور پر کامیاب رہی۔ 1 سے 30 دسمبر تک چلائی گئی اس مہم نے واضح کر دیا ہے کہ دہلی کے لوگ وزیر اعلی اروند کیجریوال کے ساتھ کھڑے ہیں۔ عوام کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی اروند کیجریوال کو کسی بھی حالت میں استعفیٰ نہ دیا جائے اور اگر ان کو جعلی کیس میں گرفتار کیا جائے تو جیل سے حکومت چلائیں۔ نام نہاد شراب گھوٹالہ مکمل طور پر سیاسی طور پر محرک ہے۔ دہلی-پنجاب میں شکست سے بی جے پی مایوس ہے۔ اس لیے وہ عام آدمی پارٹی کو ختم کرنا چاہتی ہے۔ اس مہم کے تحت عام آدمی پارٹی تقریباً 23,82,122 گھروں تک پہنچی۔ اس کے ساتھ ہی، اپنی مہم کے اگلے مرحلے کے حصے کے طور پر، عام آدمی پارٹی دہلی کے ہر وارڈ میں "میں بھی کیجریوال” عوامی رابطہ مہم چلائے گی۔اس سلسلے میں عام آدمی پارٹی کے رہنماؤں نے پیر کو پارٹی ہیڈکوارٹر میں مشترکہ پریس کانفرنس کی۔ عام آدمی پارٹی کے دہلی ریاستی نائب صدر اور ایم ایل اے ریتوراج جھا، نائب صدر اور ایم ایل اے کلدیپ کمار، نائب صدر اور ایم ایل اے راجیش گپتا اور نائب صدر جتیندر سنگھ تومر نے پریس کانفرنس میں شرکت کی۔ ‘آپ ‘ایم ایل اے ریتوراج جھا نے کہا کہ ‘میں بھی کیجریوال’ دستخطی مہم یکم دسمبر سے 30 دسمبر 2023 تک چلی۔ اس مہم کے تحت ہم 23,82,122 گھروں تک پہنچنے میں کامیاب ہوئے۔ ہم تقریباً 24 لاکھ گھروں تک پہنچے اور لوگوں کی رائے لی۔ اگر ایک گھر میں چار افراد کا خاندان سمجھا جائے تو ہم تقریباً 96 لاکھ افراد سے ملے۔ہم نے ان سے تفصیلی گفتگو کی۔ ‘میں بھی کیجریوال’ گھر گھر مہم نے بڑی کامیابی حاصل کی ہے۔ ہم نے سوچنے سے کہیں زیادہ مثبت نتائج دیکھے ہیں۔ ہماری مہم کو عوام کی طرف سے بہت پیار اور حمایت حاصل ہوئی ہے۔ مودی حکومت ای ڈی اور سی بی آئی کی مدد سے ہمیں ڈرانے کی کوشش کر رہی ہے۔لیکن ہمیں عوام کی محبت حاصل ہے۔ ہم ڈرنے والے نہیں ہیں۔ریاستی نائب صدر اور ایم ایل اے کلدیپ کمار نے کہا کہ ‘میں بھی کیجریوال’ دستخطی مہم کی کامیابی کے بعد اب ہم پوری دہلی میں ‘میں بھی کیجریوال’ عوامی رابطہ مہم شروع کرنے جا رہے ہیں۔ ہماری عوامی رابطہ مہم 4 جنوری 2024 سے شروع ہوگی۔ دہلی میں تقریباً 44 لاکھ گھر ہیں، جن میں سے ہم 24 لاکھ گھروں تک پہنچنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ اب ہم ہر وارڈ میں عوامی ڈائیلاگ کرنے جا رہے ہیں تاکہ یہ بتایا جا سکے کہ دہلی کے لوگوں کی ہماری گھر گھر مہم میں کیا رائے ہے۔ مودی حکومت پہلے ہی منیش سسودیا اور سنجے سنگھ کو جعلی شراب گھوٹالہ میں جیل بھیج چکی ہے۔ ہمارے تمام ایم ایل اے اور کونسلروں نے وزیر اعلی اروند کیجریوال سے اپیل کی ہے۔کیجریوال جی سے درخواست کی تھی کہ اگر مودی حکومت کیجریوال جی کو گرفتار کرتی ہے تو وہ کسی بھی حال میں استعفیٰ نہ دیں۔ ہماری درخواست پر وزیر اعلیٰ نے کہا تھا کہ وہ دہلی کے لوگوں سے رائے لینے کے بعد ہی کوئی فیصلہ کریں گے۔ ہماری تنظیم کے جنرل سیکرٹری نے قرعہ اندازی کی۔سندیپ پاٹھک اور ریاستی صدر گوپال رائے کی قیادت میں ہم نے یہ مہم شروع کی اور اس میں ہم نے کامیابی حاصل کی۔دہلی کے ریاستی نائب صدر جتیندر سنگھ تومر نے کہا کہ گھر گھر مہم کے تحت ہمارے وزراء ، ایم ایل اے، کونسلرز، عہدیداروں اور کارکنوں نے دہلی کے لوگوں سے براہ راست رابطہ کیا۔ ہم نے لوگوں کو بتایا کہ کس طرح مودی حکومت نے ہمارے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو جعلی گھوٹالے کی آڑ میں گرفتار کرنا چاہتے ہیں۔ ہم نے دہلی کے لوگوں کو اس جعلی شراب گھوٹالہ کے بارے میں تفصیل سے بتایا۔ ہم نے دہلی کے لوگوں سے ایک سوال پوچھا کہ اگر مودی حکومت دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کو سازش کر کے گرفتار کرتی ہے تو کیا انہیں اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دینا چاہیے یا جیل سے ہی حکومت چلانا چاہیے? ہم نے تقریباً ایک کروڑ لوگوں سے ملاقات کی اور ان میں سے 98 فیصد کا ماننا ہے کہ حالات جیسے بھی ہوں، دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو اپنے عہدے سے استعفیٰ نہیں دینا چاہیے۔ اگر مودی حکومت انہیں گرفتار کرتی ہے تو وہ جیل سے ہی حکومت چلائے۔ریاستی نائب صدر اور ایم ایل اے راجیش گپتا نے کہا کہ دہلی کے لوگوں کا کہنا ہے اروند کیجریوال ان کے بیٹے کی طرح ہیں ہم ان کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑے ہیں۔ دہلی کے لوگ کہتے ہیں کہ ہم ہر حال میں اپنے وزیر اعلیٰ کے ساتھ ہیں۔ جس طرح سے بی جے پی نے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو جیل میں ڈالنے کی سازش جو کچھ کرنے کی کوشش کر رہی ہے اس سے دہلی کے لوگ ناراض ہیں۔ آج عام آدمی پارٹی دو بڑی ریاستوں میں برسراقتدار ہے۔ دہلی میونسپل کارپوریشن میں بھی عام آدمی پارٹی کی حکومت ہے۔ گوا اور گجرات میں ہمارے ایم ایل اے ہیں۔ اس وجہ سے بی جے پی بری طرح خوفزدہ ہے۔ آج بی جے پی اروند کیجریوال سے سب سے زیادہ ڈرتی ہے، اسی لیے وہ اروند کیجریوال کو سیاسی طور پر ختم کرنے کی سازش کی جارہی ہے اور بی جے پی کیجریوال کو سلاخوں کے پیچھے ڈالنا چاہتی ہے۔

Related posts

AIMEP is committed to the advancement, revitalization, and enrichment of the Urdu language through its unwavering pursuit of promotion, renewal, and development: Aalima Dr. Nowhera Sheikh

Paigam Madre Watan

भ्रष्ट और क्रूर लोगों के खिलाफ लड़ाई ही मेरा मुख्य लक्ष्य होगा

Paigam Madre Watan

جواہر لال نہرو یونی ورسٹی میں پروفیسر غضنفر کا ایک توسیعی خطبہ بنام "افسانے کی روایت اور فن”

Paigam Madre Watan

Leave a Comment