Delhi دہلی

وزیر ماحولیات گوپال رائے نے افسران کو بائیو ماس برننگ اور گاڑیوں کی آلودگی پر قابو پانے کی سخت ہدایات دیں

نئی دہلی، (پی ایم ڈبلیو نیوز) دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے آلودگی کے پیش نظر جمعہ کو محکمہ ماحولیات اور ڈی پی سی سی کے افسران کے ساتھ ایک جائزہ میٹنگ کی۔ اس کے بعد انہوں نے کہا کہ سائنسدانوں کے مطابق دہلی میں موجودہ فضائی آلودگی کا 36 فیصد گاڑیوں کی آلودگی اور 31 فیصد بائیو ماس برننگ کی وجہ سے ہے۔ اس لیے محکمہ ٹرانسپورٹ اور دہلی پولیس کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ گریپ-3 پر پابندی کو سختی سے نافذ کریں۔ اس کے علاوہ تمام متعلقہ محکموں کو بائیو ماس برننگ کو روکنے کے لیے خصوصی مہم چلانے کی ہدایات دی گئی ہیں۔ماحولیات کے وزیر گوپال رائے نے کہا کہ موسم سرما میں آلودگی کی سطح میں اضافے کے پیچھے بائیو ماس برننگ، گاڑیوں کی آلودگی اور دھول ہے۔ اس کے ساتھ سردیوں میں ہوا کی رفتار کم ہوجاتی ہے۔ جب میٹرولوجیکل حالات بدلتے ہیں تو ہوا کی رفتار کم ہو جاتی ہے اور ہوا کا رخ بدل جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اجلاستحقیق کے دوران سائنس دانوں نے بتایا کہ دہلی اور این سی آر کی آلودگی میں فی الحال 36 فیصد گاڑیوں کی آلودگی اور 31 فیصد بائیو ماس برننگ کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ GRP-3 کے تحت BS 3 پٹرول اور BS 4 ڈیزل LMVs (4 پہیہ گاڑیوں) کے چلانے پر پابندی ہے۔ اگر کوئی اس کی خلاف ورزی کرتا ہے تو موٹر گاڑیاں ایکٹ 1988 کے تحت 20 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ اس کے لیے محکمہ ٹرانسپورٹ کی جانب سے 84 ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں۔ اس کے علاوہ دہلی پولیس کی 284 ٹیمیں تعینات کی گئی ہیں۔ محکمہ ٹرانسپورٹ اور دہلی پولیس کو سخت نگرانی کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ وزیر گوپال رائے نے کہا کہ آج دہلی میں آلودگی کی صورتحال میں معمولی اضافہ ہوا ہے۔ لہٰذا اجلاس میں اس بات پر غور کیا گیا کہ چونکہ پرالی جلانے کے واقعات میں کمی آئی ہے تو آلودگی کیوں بڑھ رہی ہے؟ ماہرین کی رائے کے مطابق اس وقت فضائی آلودگی میں گاڑیوں کا حصہ 36 فیصد ہے اوربائیو ماس برننگ کا حصہ 31 فیصد ہے۔ اس کے پیش نظر 2-3 فیصلے کیے گئے ہیں۔ پہلا فیصلہ یہ لیا گیا ہے کہ محکمہ ٹرانسپورٹ اور ٹریفک پولیس کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ گریپ تھری کے تحت BS-3 پٹرول اور BS-4 ڈیزل گاڑیوں پر عائد پابندی کو سختی سے نافذ کریں۔دوسرا، بڑھتی ہوئی سردیوں کے ساتھ، مختلف مقامات پر بائیو ماس برننگ کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے۔ اس کی روک تھام کے لیے تمام متعلقہ محکموں خصوصاً ایم سی ڈی، ریونیو، این ڈی ایم سی، دہلی کنٹینمنٹ بورڈ، ڈی ڈی اے۔ وغیرہ کو بائیو ماس برننگ کو روکنے کے لیے خصوصی مہم چلانے کا حکم دیا گیا ہے۔وزیر گوپال رائے نے کہا کہ دو تین دن تک آلودگی کی صورتحال ایسی ہی رہے گی۔ اس کے بعد آلودگی کی صورتحال میں بہتری کا امکان ہے۔ انہوں نے دہلی کے لوگوں سے اپیل کی کہ اگر وہ کسی کو کہیں بھی آلودگی پیدا کرتے ہوئے دیکھیں تو گرین دہلی ایپ پر اس کی شکایت کریں۔

Related posts

اروند کیجریوال سچے محب وطن ہیں، اسی طرح آزادی پسندوں نے بھی برطانوی آمریت کے خلاف جنگ لڑی: سنیتا کیجریوال

Paigam Madre Watan

डॉ. नौहेरा शेख की कामयाबी पर विरोधियों की घिनौनी साजिशें

Paigam Madre Watan

موجودہ وقت کے میر صادق و میر جعفر

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar