Delhi دہلی

بھارتیہ جنتا پارٹی دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال سے خوفزدہ ہیں اور اسی لیے انہیں جھوٹے مقدمے میں گرفتار کرنا چاہتی ہے: سوربھ بھردواج

مہم میں لوگوں سے موصول ہونے والی رائے کو جمع کیا جائے گا اور وزیر اعلی اروند کیجریوال کے سامنے پیش کیا جائے گا


نئی دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز) دہلی میں عام آدمی پارٹی کے کارکنوں کی طرف سے گزشتہ تین دنوں سے ‘میں بھی کیجریوال’ نام کی مہم چلائی جا رہی ہے، اسی سلسلے میں آج عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور کابینہ کے وزیر سوربھ بھردواج نے بھی اپنی اسمبلی کا دورہ کیا۔ گریٹر کیلاش ڈی ڈی اے فلیٹس کالکاجی علاقے میں ڈور ٹو ڈور مہم چلائی گئی۔اس مہم کے ذریعے عام آدمی پارٹی دہلی کے لوگوں تک بی جے پی کی سازشوں کی سیاہ سچائی کو پہنچانے کا کام کر رہی ہے اور ان کی رائے جاننے کی بھی کوشش کر رہی ہے کہ اگر اروند کیجریوال جی کو جھوٹے مقدمے میں گرفتار کیا گیا تو پھر وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال جی جیل سے حکومت چلائیں، مجھے عوام کی بے پناہ حمایت مل رہی ہے۔عوام کھل کر کہہ رہی ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی جان بوجھ کر عام آدمی پارٹی کے لیڈروں کو جھوٹے مقدمات میں پھنسایا جارہا ہے۔عوام کھلے عام یہ کہہ رہی ہے کہ بی جے پی بدلہ لے رہی ہے۔صحافیوں سے بات کرتے ہوئے وزیر سوربھ بھردواج نے کہا کہ پچھلے تین دنوں سے دہلی سے عام آدمی پارٹی کے کارکنان میں بھی کیجریوال کے نام سے مہم چلا رہے ہیں، اس مہم کے تحت پارٹی کی جانب سے عام آدمی پارٹی کے تمام کارکنان نے ملاقات کی۔ وہ گھر گھر جا کر ایک پرچہ لے کر عام لوگوں کو اس بارے میں آگاہ کر رہے ہیں۔وہ بتا رہے ہیں کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کس طرح عام آدمی پارٹی کے لیڈروں کو من گھڑت اور فرضی مقدمات میں پھنسا کر جیلوں میں ڈالنے کا کام کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسی تناظر میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے کئی بڑے رہنما یہ کہہ رہے ہیں۔ یہ دھمکی بھی دی کہ اب عام آدمی پارٹی اور دہلی کے سربراہ اسی طرح وزیر اعلی اروند کیجریوال جی کو جھوٹے مقدمے میں پھنسایا جائے گا اور جیل بھیج دیا جائے گا۔ سوربھ بھردواج نے کہا کہ دہلی کی عوام نے دہلی کی حکومت چلانے کے لیے اروند کیجریوال جی کو اکثریت دی تھی، اسی لیے ہم عوام کے ساتھ ہیں۔ ہم ان سے اور عوام سے ان کی رائے جاننے کے لیے یہ مہم چلا رہے ہیں۔ہمیں جو بھی جواب ملتا ہے، ہمارے کارکن اسے ایک رجسٹر میں درج کر رہے ہیں اور پوری دہلی سے ڈیٹا اکٹھا کر رہے ہیں۔ وزیر سوربھ بھردواج نے صحافیوں سے کہا کہ آپ سب کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ اس ڈور ٹو ڈور مہم سے پہلے ہم سمجھتے تھے کہ شاید عوام کو اس سازش کے بارے میں علم نہیں ہے لیکن پچھلے تین دنوں میں گھر گھر جا کر وزٹ کیا گیا ہے۔ اس دوران موصول ہونے والے فیڈ بیک سے ایک انتہائی چونکا دینے والا سچ سامنے آیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ نہ صرف گھر کے لوگ بلکہ والدین، اسکول میں پڑھنے والے بچے، کالج میں پڑھنے والے بچے، سبھی اچھی طرح جانتے ہیں کہ کس طرح بھارتیہ جنتا پارٹی اور عام آدمی پارٹی کے بڑے لیڈروں پر جھوٹے مقدمات بنائے جا رہے ہیں۔مجھے پھنسا کر جیل میں بند کر دیا۔ انہوں نے بتایا کہ ریلی کے دوران ہمیں دہلی کے لوگوں سے بے پناہ ہمدردی مل رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ لوگ اپنے منہ سے یہ مان رہے ہیں کہ بھارتیہ جنتا پارٹی جان بوجھ کر عام آدمی پارٹی کے رہنماؤں کو جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کی سازش کر رہی ہے۔ وزیر سوربھ بھردواج نے کہا۔ کہ پوری یہ مہم دہلی میں چلائی جا رہی ہے اور عام آدمی پارٹی کا مقصد ہے کہ ہم اس مہم کے دوران دہلی کے تمام بوتھوں کا احاطہ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ جب ہم اس مہم کے تحت ہر بوت کا احاطہ کریں گے، اس دن یہ مہم چلائی جائے گی اور ہمیں دہلی کے لوگوں کی طرف سے جو بھی جواب ملے گا۔وہ تمام ڈیٹا اکٹھا کر کے دہلی کے مقبول وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کے سامنے پیش کیا جائے گا۔وزیر سوربھ بھردواج نے صحافیوں کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اس مہم کے تحت ہم گھر گھر جا کر عوام کا ردعمل جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔کیونکہ دہلی کے عوام نے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو ووٹ دے کر دہلی میں اقتدار میں لایا ہے اور پوری دہلی کی عوام دیکھ رہی ہے کہ کس کو کس طرح گزشتہ کچھ عرصے سے بھارتیہ جنتا پارٹی عام آدمی پارٹی کے رہنماؤں کو فرضی کیسوں میں پھنسا کر جیلوں میں بند کر رہی ہے اور ایسی ہی اطلاعات بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنماؤں سے سننے کو مل رہی ہیں کہ اب وہ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کو جھوٹی سازش کے تحت گرفتار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، اس کے پیش نظر ہم دہلی کے لوگوں کے پاس جا رہے ہیں تاکہ ان کا ردعمل معلوم ہو کہ دہلی کے لوگ کیا چاہتے ہیں، اگر اروند کیجریوال جی گرفتار ہو جائیں تو وہ جیل میں رہیں اور حکومت چلائیں۔ کیا ایسا کرنا چاہیے یا نہیں کرنا چاہیے؟انہوں نے کہا کہ یہ بات بالکل واضح ہے کہ عام آدمی پارٹی کے سبھی لیڈروں کو جھوٹے مقدمات میں پھنسایا گیا ہے، کیونکہ جب سے یہ کیس چل رہا ہے، سپریم کورٹ نے سی بی آئی اور ای ڈی سے درجنوں بار ثبوت مانگے ہیں کہ اگر کوئی گھوٹالہ ہوا ہے، بدعنوانی تو ہوئی ہے۔ اگر ہاں تو کرپشن کا پیسہ کہاں گیا، پیسہ کہاں سے آیا، کس کو دیا گیا، اس کا کیا فائدہ؟کیا کوئی ثبوت ہے؟ لیکن آج تک سی بی آئی اور ای ڈی نے اس سلسلے میں ایک بھی ثبوت پیش نہیں کیا ہے۔وزیر سوربھ بھاردواج نے صحافیوں کو بتایا کہ گھر گھر مہم کے تحت لوگوں سے ملنے والے نتائج اور ردعمل ہماری توقعات سے کہیں زیادہ ہے۔انہوں نے کہا کہ 90 فیصد سے زیادہ لوگ اس پر یقین رکھتے ہیں۔اروند کیجریوال کو دہلی کی حکومت چلانی چاہئے۔ لوگ کھلے عام وہ آگے آکر کہہ رہے ہیں کہ بھارتیہ جنتا پارٹی جان بوجھ کر اور زبردستی عام آدمی پارٹی کے لیڈروں کو جھوٹے مقدمات میں پھنسا کر گرفتار کر رہی ہے، لوگ اس حقیقت کو کھلے دل سے قبول کر رہے ہیں کہ دہلی میں بھارتیہ جنتا پارٹی اس قسم کی سازش کر رہی ہے۔ پارٹی کی شکست سے ناراضگی کی وجہ سے لوگ کھلے عام کہہ رہے ہیں کہ بھارتیہ جنتا پارٹی دہلی میں اپنی شکست کا بدلہ عام آدمی پارٹی سے لینے کے لیے ایسی سازشیں رچ رہی ہے، دہلی کے لوگ کھل کر اروند کیجریوال کا ساتھ دے رہے ہیں اور عوام کہہ رہے ہیں کہ یہ باہر سے چلائی جائے یا جیل سے۔لیکن دہلی حکومت صرف اروند کیجریوال جی کو چلانی چاہیے۔ وزیر سوربھ بھردواج نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اروند کیجریوال سے بہت خوفزدہ ہے کیونکہ بھارتیہ جنتا پارٹی جانتی ہے کہ دہلی کے پچھلے تین اسمبلی انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی کو بری طرح شکست ہوئی ہے اور بھارتیہ جنتا پارٹی اس بات سے خوفزدہ ہے۔ دہلی الیکشن لڑ کر وہ اروند کیجریوال جی کو ہرا نہیں سکتے، اسی وجہ سے بھارتیہ جنتا پارٹی ایک سازش کے تحت اروند کیجریوال جی اور عام آدمی پارٹی کے دیگر بڑے لیڈروں کو جھوٹے مقدمات میں گرفتار کرکے دہلی میں چل رہی عام آدمی پارٹی کی حکومت کو شکست دینا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی عوام پارٹی اپنے مذموم عزائم میں کبھی کامیاب نہیں ہو سکے گی۔دہلی کے عوام کی محبت، دہلی کے لوگوں کا آشیرواد ہمیشہ اروند کیجریوال جی کے ساتھ رہا ہے اور مستقبل میں بھی دہلی کے عوام ہمیشہ عام آدمی پارٹی اور اروند کیجریوال جی کے ساتھ ہمیشہ بنا رہے گا۔

Related posts

आल इंडिया महिला एम्पावरमेंट पार्टी का शैक्षणिक स्तर ऊंचा उठाने का संकल्प

Paigam Madre Watan

پروفیسر ابوذرعثمانی کا انتقال ، اردو زبان وادب کا ناقابل تلافی نقصان : سید احمد قادری

Paigam Madre Watan

بڑھتی ہوئی آلودگی کے مسئلے کے پیش نظر، سی اے کیو ایم کے حکم پر دہلی میں گریپ کی پابندی کے تیسرے مرحلے کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا

Paigam Madre Watan

Leave a Comment