Delhi دہلی

18 جنوری کے انتخابی نتائج ملک کا موڈ پیش کریں گے: راگھو چڈھا

نئی دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز)لوک سبھا انتخابات سے پہلے چندی گڑھ میئر کے انتخابات میں ‘انڈیا’ بمقابلہ بی جے پی کے درمیان پہلا مقابلہ ہونے جا رہا ہے۔ 18 جنوری کو ہونے والے چندی گڑھ کے میئر کا انتخاب انڈیا اتحاد مشترکہ طور پر لڑے گا۔ عام آدمی پارٹی نے منگل کو اس کا اعلان کیا۔ "آپ” کے رکن پارلیمنٹ راگھو چڈھا نے کہا کہ یہ "انڈیا”اور بی جے پی کے درمیان یہ پہلا میچ ہوگا جو ملک کی سیاست کی تقدیر، تصویر، حالت اور سمت بدل دے گا۔ اس کے علاوہ یہ انتخاب 2024 کے لوک سبھا انتخابات کا آغاز بھی ہوگا۔ انڈیا اتحاد یہ الیکشن پوری طاقت سے لڑے گا اور تاریخی فتح درج کرائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جب بھی ٹیم انڈیا کا مقابلہ دنیا کی کسی بھی ٹیم سے ہوا۔ہندوستانیوں نے ہمیشہ ٹیم انڈیا کو جتوایا ہے۔ چندی گڑھ کے میئر کے انتخابات میں بھی انڈیا متحد ہوں گے اور ٹیم انڈیا کو جیت دلائیں گے۔ ٹیم انڈیا کی جیت کا یہ رتھ صرف چندی گڑھ تک محدود نہیں رہے گا بلکہ کشمیر سے کنیا کماری اور منی پور سے ممبئی تک جائے گا اور 2024 کے لوک سبھا انتخابات میں مرکز میں بیٹھی تاناشاہ اور نکممی بی جے پی کو شکست ہوگی۔ملک کے عوام کو حکومت سے آزاد کرائیں گے۔عام آدمی پارٹی کے سینئر لیڈر اور پنجاب سے راجیہ سبھا ممبر راگھو چڈھا نے منگل کو چندی گڑھ کے میئر انتخابات کے سلسلے میں پارٹی ہیڈکوارٹر میں ایک اہم پریس کانفرنس کی۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد بننے کے بعد انڈیا اپنا پہلا الیکشن لڑنے جا رہا ہے۔ یہ انڈیا بمقابلہ بی جے پی کا پہلا انتخابی مقابلہ ہوگا۔ انڈیا اتحاد آئندہ 18 جنوری میں ہونے والے چندی گڑھ کے میئر کا انتخاب مشترکہ طور پر لڑیں گے۔ یہ الیکشن عام انتخابات نہیں ہیں۔ یہ الیکشن ایک ایسا الیکشن ہے جو اس ملک کی سیاست کی تقدیر، تصویر، حالت اور رخ بدل دے گا۔ یہ انتخاب آئندہ 2024 کے لوک سبھا انتخابات کی بنیاد رکھے گا۔ایم پی راگھو چڈھا نے کہا کہ انڈیا الائنس پہلی بار انتخابی میدان میں بی جے پی کا سامنا کرنے جا رہی ہے۔ یہ الیکشن انڈیا بمقابلہ بی جے پی کے پہلے الیکشن کے طور پر جانا جائے گا۔ ہمیں یقین ہے کہ انڈیا الائنس چندی گڑھ کے میئر کے انتخابات میں پوری طاقت کے ساتھ مقابلہ کرے گا اور تاریخی فیصلہ کن جیت درج کرے گا۔ یہ چندی گڑھ کے انتخابات کو عام عام انتخابات سمجھنا غلط ہوگا۔ یہ ایک ایسا انتخاب ہوگا جس میں پہلی بار انڈیا بمقابلہ بی جے پی کے درمیان براہ راست مقابلہ ہونے جا رہا ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ جیت درج کرنے کے بعد انڈیا الائنس کا یہ جیت کا رتھ صرف چندی گڑھ تک محدود نہیں رہے گا۔ یہ کشمیر سے کنیا کماری اور منی پور سے ممبئی تک پھیلا ہوا ہے۔ آپ کے رکن پارلیمنٹ راگھو چڈھا نے کہا کہ جب بھی ٹیم انڈیا کا دنیا میں کسی بھی ٹیم کا سامنا ہوا ہے، ہندوستانیوں نے ہمیشہ ٹیم انڈیا کو جیت دلائی ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ انڈیا متحد ہوں گے اور 18 جنوری کو ہونے والے چندی گڑھ کے میئر کے انتخابات میں ٹیم انڈیا کو کامیاب بنائیں گے۔ سکور کارڈ انڈیا اس الیکشن کے بعد ایک اور بی جے پی صفر ہو جائے گی ۔ ہمیں یقین ہے کہ یہ 18 جنوری کو انڈیا الائنس کے کلین سویپ کے بعد 2024 کے لوک سبھا انتخابات کا آغاز ہوگا۔ انڈیا الائنس کا بی جے پی کے ساتھ پہلا مقابلہ 18 جنوری کو ہونے جا رہا ہے، یہ 2024 کے لوک سبھا انتخابات کا آغاز ہوگا۔ یہ انتخاب آنے والے وقتوں میں ہندوستان بمقابلہ بی جے پی کے لئے سر سیٹ کرے گا۔ان کے درمیان جو بھی انتخابی مقابلہ ہوگا، اس کے نتائج کیا ہوں گے؟ایم پی راگھو چڈھا نے کہا کہ اس سے ایک اور بڑی بات ثابت ہوگی، وہ یہ ہے کہ جب انڈیا اتحاد مل کر الیکشن لڑتا ہے تو ون پلس ون دو نہیں، ون پلس ون سے گیارہ بنتا ہے۔ چنڈی گڑھ کے میئر کا انتخاب یہ ثابت کرے گا۔ چندی گڑھ کے میئر انتخابات میں انڈیا اتحاد کی جیت کا پیغام ملک کے کونے کونے تک پہنچے گا۔ آج ملک کے عوام آمرانہ اور نااہل حکومت سے آزادی کی ضرورت ہے، چندی گڑھ کے میئر کے انتخاب سے امید پیدا ہو گی کہ اگر انڈیا اتحاد متحد ہو کر الیکشن لڑتا ہے تو وہ الیکشن صرف انڈیا اتحاد جیتے گا اور جو بھی انڈیا اتحاد سے ٹکرائے گا وہ ٹکڑے ٹکڑے ہو جائے گا۔ چنڈی گڑھ کے میئر کے انتخابات سے یہ پیغام ضرور سامنے آئے گا۔ فی الحال چندی گڑھ میں بی جے پی کی پارٹی ہے۔یہ ایک بے کار اور آمرانہ سلطنت ہے، چندی گڑھ کے عوام اس سے نجات حاصل کریں گے۔ انڈیا الائنس چندی گڑھ کے لوگوں کو بی جے پی کی آمرانہ حکومت سے آزاد کرائے گا اور 2024 میں انڈیا الائنس ملک کے لوگوں کو مرکز میں بیٹھی آمرانہ اور غیر موثر بی جے پی حکومت سے بھی آزاد کرائے گا۔ چنڈی گڑھ 18 جنوری کو منعقد ہوگا۔میئر کا انتخاب بہت فیصلہ کن ہونے جا رہا ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ 18 جنوری کو بی جے پی کے ساتھ انڈیا اتحاد کی پہلی لڑائی 2024 کے انتخابات کی شروعات ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ الیکشن جیتنے کے بعد عام آدمی پارٹی کا میئر بنے گا اور کانگریس سے دو ڈپٹی میئر بنیں گے۔

Related posts

ईडी द्वारा सुप्रीम कोर्ट के आदेश का उल्लंघन

Paigam Madre Watan

بڑھتی ہوئی آلودگی کے مسئلے کے پیش نظر، سی اے کیو ایم کے حکم پر دہلی میں گریپ کی پابندی کے تیسرے مرحلے کو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا

Paigam Madre Watan

میں بھی کیجریوال دستخطی مہم کے بعد اب دہلی میں عوامی ڈائیلاگ کرے گی عام آدمی پارٹی: سندیپ پاٹھک

Paigam Madre Watan

Leave a Comment