Delhi دہلی

امام خمینی اور مولانا خامنہ ای جو سیاسی طور پر بہت مماثلت رکھنے والی دو شخصیات ہیں،لیکن پھر بھی دونوں میں زمین آسمان کا فرق ہے، مولانا حسن علی راجانی

دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز) مولانا حسن علی راجانی نے کہا کہ   امام خمینی اور مولانا خامنہ ای میں زمین آسمان کا فرق ہے، جب کہ دونوں کا تعلق ایران کے سخت گیر لوگوں سے ہی ہے، لیکن دونوں بالکل مختلف شخصیات ہیں۔ امام خمینی ایک ماہر حکمت عملی سے ایک طویل عرصے تک سیاست میں خدمات انجام دینے کے بعد، ان کی سیاسی خواہشات اور پولیسی بہت حساب کتاب سے تھی,  وہ اختلاف رائے پر حکومت کرنا جانتے تھے اور اپنے حامیوں پر سخت برتری کا حکم دیتے تھے۔ مولانا خامنہ ای نے امام خمینی سے خوب سبق سیکھا۔ اسی لئے انہونے مظاہرین کے خلاف فوجی طرز کا کریک ڈاؤن نہیں کیا جس کے بارے میں مجھے لگتا تھا کہ وہ ضرورکرتے۔  تاہم، میں یہ بھی سوچتا ہوں کہ ان مظاہروں نے اسے گرے زون میں ڈال دیا ہے۔  وہ الجھن کا شکار دکھائی دیتے رہے کہ جواب کیسے دیا جائے۔  اگرچہ واضح طور پر، ابھی بھی پرتشدد کریک ڈاؤن جاری ہے اور اس کا واحد جواب قانون کو ختم کرنا اور اصلاحات کرنا ہے۔تاہم، امام خمینی کی زیادہ مقبولیت تھی۔  ان کے سادہ طرز زندگی، اور طرزِ عمل اور دیہی لہجے نے ان کے حامیوں کو بے چین کر دیاتھا۔  انہونے خود کو سیاست دان کی طرح نہیں بلکہ ایک رہبر و امام کی طرح اپنے قدم اٹھآئے ۔  جو بہت اچھا ثابت ہوا۔ امام خمینی سیاسی تجربے کے ساتھ ایران کے مسئلہ میں داخل ہوئے۔  اور انہونے ضرورت کے مطابق اپنے خیالات کو ڈھالنے اور لوگوں کی فکر تبدیل کرنے کی کوشش کی۔ جب کہ مولانا  خامنہ ای جیسے شخص کے لیے ایسا کرنا بہت مشکل ثابت ہوا۔

Related posts

غالب انسٹی ٹیوٹ کے زیر اہتمام سہ روزہ بین الاقوامی غالب سمینار اختتام پذیر

Paigam Madre Watan

بھگوان شری رام کے استقبال کے لیے پورا ملک قطار میں کھڑا ہے، دہلی والے بھی اس میں پیچھے نہیں: دلیپ پانڈے

Paigam Madre Watan

مطیع الرحمن عزیز کو کل ہند اقلیتی ونگ کا صدر منتخب کیا گیا

Paigam Madre Watan

Leave a Comment