National قومی خبریں

خودکش بم دھماکہ والے لونڈیں سب ایرانیین فنڈینگ سے بنتے ہیں، شیعہ مولانا حسن علی راجانی

مہوا(پی ایم ڈبلیو نیوز) شیعہ مولانا حسن علی راجانی آج کل گجرات کے دورے پر ہے جس میں انہونے بتایا کہ دنیا میں خودکش بم دھماکہ والے لونڈیں سب ایرانی فنڈینگ سے بنتے ہیں، اور اس کو بنانے میں ایران سے دس سال عیاشی کرنے والے علماء ہوتے ہیں جو امام خمینی کا خواب دیکھ کر ہندوستان میں قدم رکھتے ہیں، یہ ہم جنس پرست شیعہ علماء خوب صورتخوب صورت لڑکوں کو پھنسا کر اپنے پاس مجلس و ماتم میں کے بہانے بلا کر ایل گینگ بناتے ہیں اور یہ گینگ آپس میں ایک دوسرے سے ہم بستری کرنے کے مواقع دیتے ہیں، تاکہ ان کا ضمیر مر جائے اور شیعہ مولانا اس بچے کو کہتے ہیکہ اب تمہارا مقام بہت اونچا اور وسیع ہو جائیگا اور اگر تم نے اسلام بچانے کیلئے اگر تم نے اپنی جان دے دی توتمہیں جنت میں عیش کرنے کیلئے حور کے ساتھ غلمان بھی ملیگا جس کا سامان مشرق سے لے کر مغرب تک ہوگا اور اس کے کام کا دورانیہ ہزاروں سال تک ہوگا تو وہ معصوم بچے بہک جاتے ہیں اور سوچتے ہیکہ جب اس دنیا میں چار پانچ اینچ کے سامان اور ایک دو منٹ کے دورانیہ میں اتنا مزہ آ رہا ہیکہ ہم خود کش بم دھماکہ کرنے کیلئے تیار ہو گئے ہیں تو پھر جنت کے اس غلمان میں کتنا مزہ آئیگا، اس لئے مولانا راجانی نے کہا کہ والدین اپنے چکنے لونڈوں کو نہ مدرسہ میں اور نہ کسی مولوی کے پاس بھیجے کونکہ ان بیچارے مولویوں کو مدرسوں کی زندگی سے لیکر بہت بڑی عمر تک ایک بوڑھیا بھی دیکھنے کو تو کیا کبھی کسی مولوی پارک وارک یا فلم وغیرہ تک نہیں جا پاتا ہیں، اس لئے یہ مولوی لونڈوں کے ساتھ ہی اپنا ہاتھ صاف کرکے کہتے ہیکہ قوم نہ ہمیں گھومنے پھرنے دیگی اور نہ کبھی فلم وغیرہ دیکھنے دیگی یا کہیں اور ہمیں اپنا ہاتھ صاف کرنے دیگی بس قوم بچپنے سے لیکر بوڑھے ہونے تک اپنے چکنے چکنے لونڈیں ہی بھیجا کرتی ہے تو اب ہم بھی لونڈوں پر قناعت کر لیتے ہیں، لہذا مولانا راجانی نے کہا کہ شیعہ قوم اپنے بچوں کوعلماء یا مدارس میں بالکل نہ بھیجے ورنہ ان کے لڑکوں کی دنیا کے ساتھ آخرت بھی خراب ہوگی، اور رہا سوال غلمان کا تو آپ اس سے انداہ لگائے کہ جب ہماری عورتیں اس بات سے پریشان ہیکہ جنت میں ایک ایک مرد کو ستر ستر حوریں ملیگی تو ہم کو کیا ملیگا لہذا جنت میں غلمان کا سامان مشرق سےلیکر مغرب تک ہوگا اور اس کے کام کا دورانیہ ہزاروں سال ہوگا یہ بالکل غلط ہیں، ہاں جو چیز جنت میں ہیں اس کا ذکر کئی جگہ پر خود قرآن شریف میں مل جائیگا اور کونسی چیز جہنم میں ہیں اس کا بھی ذکر قرآن مجید میں کئی جگہ پر مل جائیگا، مولانا راجانی نے کہا کہ وہ لونڈیں یہ کہہ کر شیعوں کو خوش کرتے ہیکہ ہم علی و کے ماننے والوں کو نہیں مارتے، کیونکہ علی والا تو ہمارے ساتھ جنت میں کام آئیگا ہم فقط عمری کی اولادو اور کافروں کو مارتے ہیں اس لئے کہ یہ تو یوں بھی جہنم میں ہی جائیگا، جس پر مولانا راجانی نے کہا کہ کرمان شہر میں پھر کیوں ایک شیعہ تنظیم نے دوسری شیعہ تنظیم میں خودکش دھماکہ کر دیا اور اگر ان سے بھول بھی ہو گئی اور یہ آپ کے ساتھ جنت میں آپ کے ساتھ کام کرنے والا ہے تو ایران کو ان 23 شیعہ کو چھوڑ دینا چاہئے جو کرمان شہر گھٹنا ہوئی، راجانی نے کہا ایران کی جیلوں میں ہزاروں ہم جنس علماء اور شیعہ ہیں انہیں ایران کیوں نہیں چھوڑ رہا ہے، راجانی نے کہا کہ ہم ایران ویران کے کوئی ذمہ دار نہیں ہیں ہم اپنے بھارتی لونڈوں کیلئے لکھتے ہیں اورلکھتے رہینگے کہ جب تک ایران حمایتی شیعہ علماء ہمارے لونڈوں کا آگا نہیں چھوڑینگے تب تک ہم بھی ان ایران حمایتی ہم جنس پرست شیعہ کا پیچھا نہیں چھوڑینگے، اور بھائی تمہیں تمہاری جنت کے غلمان کا سامان مبارک ہمیں یہاں دیڑھ انگل کی مسجد میں نماز پڑھانے دو

Related posts

BEL receives orders worth Rs 4878 crores

Paigam Madre Watan

 عالمہ ڈاکٹرنوہیرا شیخ نے ملک گیر یاترا کا کیا آغاز

Paigam Madre Watan

Global Peace Ambassador Expresses Grief Over the Death of Iran’s President Ebrahim Raisi

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar