Delhi دہلی

مودی حکومت نے اروند کیجریوال کے قریبی لیڈروں کو جیل میں ڈالنے کے لیے ای ڈی کو صرف ایک کام سونپا ہے: آتشی

نئی دہلی،وزیراعلیٰ کے پی ایس اور ایم پی این ڈی گپتا کے گھر پر منگل کو ای ڈی کے چھاپے پر سنگین سوالات اٹھ رہے ہیں۔ آپ کی سینئر لیڈر آتشی نے کہا کہ بی جے پی کی ای ڈی کا اصلی چہرہ اب ملک کے سامنے بے نقاب ہو گیا ہے۔ ای ڈی نے منگل کو 16 گھنٹے تک وزیراعلیٰ کے پی ایس اور ایم پی این ڈی گپتا کے گھر چھاپے مارے گئے لیکن آخر تک یہ نہیں بتایا گیا کہ چھاپہ کس صورت میں مارا گیا۔ ای ڈی نے نہ تو ان سے پوچھ گچھ کی، نہ ان کے گھر کی تلاشی لی اور نہ ہی اپنے پنچ نامے میں کسی کیس کا ذکر کیا۔ جبکہ قواعد کے مطابق انہیں بتانا چاہیے کہ کیس اور اس کا ای سی آئی آر نمبر کیا ہے؟ای ڈی کے چھاپے کا بنیادی مقصد صرف میڈیا میں ماحول بنانا تھا تاکہ وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کو بدنام کیا جاسکے۔ ای ڈی نے اب تمام دکھاوا چھوڑ دیا ہے اور واضح کر دیا ہے کہ یہ تحقیقات اور سمن صرف وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کو ختم کرنے کی سازش ہے۔ عام آدمی پارٹی کی سینئر لیڈر اور دہلی حکومت میں کابینہ کے وزیر آتشی نے بدھ کو پارٹی ہیڈکوارٹر میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ منگل کو مرکزی حکومت کی جانچ ایجنسی ای ڈی نے عام آدمی پارٹی سے وابستہ کئی لوگوں کے گھروں پر چھاپہ مارا۔ ای ڈی نے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کے پی ایس کے گھر پر 16 گھنٹے تک چھاپہ مارا۔ عام آدمی پارٹی کے خزانچی اور راجیہ سبھا ایم پی این ڈی گپتا کے گھر پر 18 گھنٹے تک چھاپہ مارا گیا۔ لیکن چھاپے کے دوران ای ڈی نے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کے پی ایس اور ایم پی این ڈی گپتا کے گھر کی کوئی تلاشی نہیں لی، کسی کمرے میں بھی داخل نہیں ہوئے اور نہ ہی کوئی کاغذات ملے۔ ای ڈی نے وزیراعلیٰ کے پی ایس کو گرفتار کیا ہے۔ایم پی این ڈی گپتا سے بھی پوچھ گچھ نہیں کی گئی۔ ای ڈی نے کوئی کاغذی کارروائی بھی پیش نہیں کی اور یہ بھی نہیں بتایا کہ وہ کس معاملے میں تحقیقات کرنے آئے تھے۔ ای ڈی کی تاریخ میں شاید یہ پہلا موقع ہوگا کہ 16 گھنٹے تک چھاپہ ماری جاری رہی، لیکن اس نے تحریری طور پر یہ نہیں بتایا کہ وہ کس معاملے میں چھاپہ مارنے آئے ہیں اور کس معاملے کی تفتیش جاری ہے۔ اے اے پی لیڈر آتشی نے کہا کہ ایک اصول کے طور پر جب بھی ای ڈی چھاپہ مارنے آتا ہے، کچھ تلاشی اور ضبطی کی جاتی ہے۔ کیا تلاشی اور ضبطی کی دستاویز پر واضح طور پر لکھا ہے کہ یہ کون سا کیس ہے یا ECIR (ED زبان میں FIR) نمبر کیا ہے؟میڈیا کو ای ڈی کا پنچ نامہ دکھاتے ہوئے آتشی نے کہا کہ شاید ای ڈی کی تاریخ کا یہ ایک تاریخی پنچنامہ ہے، کیونکہ اس پنچنامے میں کہیں بھی یہ نہیں لکھا گیا ہے کہ وہ کس معاملے کی تفتیش کے لیے آئے ہیں۔ اس میں نہ تو ECIR نمبر درج ہے اور نہ ہی اس کی کوئی تفصیلات ہیں۔ منگل کے چھاپے میں ای ڈی یہ بتانے کو بھی تیار نہیں ہے۔وہ کس کیس میں چھاپہ مارنے آئی تھی؟ 16 گھنٹے کے چھاپے کے دوران ای ڈی کے افسران وزیر اعلیٰ کے پی ایس کے ڈرائنگ روم میں بیٹھے رہے۔ اس دوران انہوں نے نہ تو کوئی کاغذات دیکھے، نہ کوئی تلاشی لی اور نہ ہی کوئی رقم ۔ ای ڈی نے وزیراعلیٰ کے دو پی ایس کو گرفتار کیا۔جی میل اکاؤنٹ کا ڈیٹا ڈاؤن لوڈ کیا اور 3 موبائل فون چھین لیے۔ لیکن یہ شور پوری دنیا میں جاری رہا اور میڈیا میں کہ وزیراعلیٰ کے پی ایس اور پارٹی کے راجیہ سبھا ایم پی کے گھر پر ای ڈی کے چھاپے پڑ رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اب ای ڈی نے یہ بہانہ کرنا بھی چھوڑ دیا ہے کہ وہ کس معاملے میں تفتیش اور تلاش کرنے آئی ہے یا اس کے پاس کوئی دستاویز ہے یا نہیں۔ ای ڈی نے اب اپنا اصلی چہرہ سب کے سامنے ظاہر کر دیا ہے کہ چھاپوں اور سمن کا مقصد صرف وزیر اعلی اروند کیجریوال پر حملہ کرنا اور انہیں کچلنا ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی اور وزیر اعظم نریندر مودی جانتے ہیں کہ اگر کوئی انہیں چیلنج کر سکتا ہے تو وہ صرف وزیر اعلی اروند کیجریوال ہیں۔ اروند کیجریوال چھاپوں، سمن اور جیل جانے سے نہیں ڈرتے۔ اس لیے تمام نقاب ہٹا کر اور دکھاوا ختم کرتے ہوئے ای ڈی کو صرف ایک کام دیا گیا ہے کہ وہ اروند کیجریوال اور پارٹی کے سبھی لیڈروں کو جیل میں ڈال دو ۔ آپ لیڈر آتشی نے کہا کہ پہلے یہ طے ہوتا ہے کہ کس کو جیل میں ڈالنا ہے اور پھر یہ فیصلہ کیا جاتا ہے کہ کس کیس کے تحت، لیکن اب صورتحال یہ ہے کہ بی جے پی کی مرکزی حکومت نے انہیں ای ڈی کیس میں جیل میں ڈالنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تفتیش اور سمن کا بہانہ ختم کر دیا گیا ہے۔ اب یہ بالکل واضح ہو گیا ہے کہ یہ تحقیقات نہیں بلکہ دہلی کی تفتیش ہے۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال کو ختم کرنے کی سازش ہو رہی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ای ڈی کا چھاپہ میڈیا میں ماحول بنا کر وزیراعلیٰ اروند کیجریوال کو بدنام کرنے کے لیے کیا گیا تھا۔

Related posts

فاؤنڈیشن آف سارک رائٹرس اینڈ لٹریچر کے بین الاقوامی فیسٹیول میں باوقار مشاعرے کا انعقاد

Paigam Madre Watan

 پھلتے پھولتے اروناچل پردیش کیلئے ڈاکٹر نوہیرا شیخ کا وژنری سفر

Paigam Madre Watan

IGNOU Strengthens Global Presence through a Memorandum of Agreement with ICA Education Pvt. Ltd., Nepal

Paigam Madre Watan

Leave a Comment