Delhi دہلی

بھٹنڈہ کی وکاس کرانتی ریلی میں 1125 کروڑ روپے کے ترقیاتی کاموں کا آغاز کرتے ہوئے کیجریوال نے کہا، "پنجاب اب ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔”

اب پنجاب میں عام آدمی پارٹی کی ایماندار حکومت ہے، کوئی کام نہیں رکے گا اور مل کر پنجاب کو رنگلا پنجاب بنائیں گے: بھگونت مان


اس رقم سے 7 نئے سرکاری اسکول، 13 محلہ کلینک، 2 اوور برج، ایک بس اسٹینڈ کے ساتھ ساتھ سیور ، سڑک اور پانی کا کام کیا جائے گا: اروند کیجریوال


نئی دہلی؍پنجاب،(پی ایم ڈبلیو نیوز)پنجاب کے موڑ منڈی میں منعقدہ وکاس کرانتی ریلی کے دوران دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان نے بھٹنڈہ لوک سبھا حلقہ میں 1125 کروڑ روپے کے ترقیاتی کاموں کا آغاز کیا۔ اس دوران دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ پنجاب اب ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔ ”آپ”حکومت نے گورداسپور میں 1850 کروڑ روپے اور ہوشیار پور لوک سبھا حلقہ میں 850 کروڑ روپے سے ترقیاتی کام بھی شروع کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آزادی کے 75 سال ہوچکے ہیں لیکن آج تک اکالی، کانگریس یا بی جے پی حکومتوں نے کبھی بھی بھٹنڈہ کو 1125 کروڑ کا پیکیج نہیں دیا۔ اس رقم سے بھٹنڈہ لوک سبھا علاقے میں 7 نئے سرکاری اسکول، 13 محلہ کلینک، 2 اوور برج اور ایک بس اسٹینڈ تعمیر کیا جائے گا۔ اس کے ساتھ سیوریج، سڑک اور پانی کا کام کیا جائے گا۔ پنجاب کے عوام آپ حکومت کے کاموں سے بہت خوش ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ آئندہ لوک سبھا انتخابات میں عوام پنجاب کی تمام 13 سیٹیں AAP کو دے کر ہمیں مضبوط کریں گے۔
دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ پنجاب کے رہنے والے امرک سنگھ نے فوج میں کام کیا اور ملک کی حفاظت کرتے ہوئے شہید ہو گئے۔ وزیر اعلی بھگونت مان نے آنجہانی امرک سنگھ کے اہل خانہ کو ایک کروڑ روپے کا چیک دیا۔ امریک سنگھ کے والد مرحوم کو یقین نہیں آرہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب یہ شہیدوں اور بہادروں کی سرزمین ہے۔ ہر دوسرے تیسرے خاندان سے کوئی نہ کوئی فوج میں ہے۔ ملک کی حفاظت کرتے ہوئے بہت سے لوگ شہید ہوتے ہیں۔ لیکن آج تک کسی حکومت نے شہداء کے لواحقین کا کوئی خیال نہیں رکھا۔ پنجاب میں پہلی بار عام آدمی پارٹی کی حکومت نے شہیدوں کے اہل خانہ کی دیکھ بھال کی ہے۔ اب اگر پنجاب کا رہنے والا اگر کوئی سپاہی شہید ہوتا ہے یا کوئی پولیس اہلکار ڈیوٹی پر شہید ہوتا ہے تو وزیر اعلی بھگونت مان خود اس کے گھر جاتے ہیں اور اپنے ہاتھوں سے اس کے خاندان کو ایک کروڑ روپے کا اعزازیہ دیتے ہیں۔
وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ کسی کی جان پر کوئی قیمت نہیں لگائی جا سکتی۔ بھائی امرک سنگھ کی جان کی قیمت ایک کروڑ روپے نہیں ہے۔ لیکن کم از کم ان کے خاندان کو لگتا ہے کہ پنجاب اور ملک ان کے ساتھ کھڑا ہے، پنجاب حکومت ان کے ساتھ کھڑی ہے۔ ان کے دل کو سکون ملتا ہے۔ میں نے دیکھا کہ امرک سنگھ کے والد کی آنکھوں میں آنسو تھے۔ پنجاب میں پہلی بار کوئی ایسا شخص آیا ہے جو ایسے شہداء کے لواحقین سے تعزیت کرے۔ اسی علاقے کے رہنے والے اگنیور امرت پال بھی شہید ہوئے تھے۔ مرکزی حکومت نے انہیں کوئی اعزاز نہیں دیا، لیکن وزیر اعلی بھگونت مان امرت پال کے گھر گئے اور ان کے اہل خانہ کو اعزازیہ کے طور پر ایک کروڑ روپے کا چیک دیا۔دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ آج پنجاب کی عام آدمی پارٹی کی حکومت بھٹنڈہ لوک سبھا میں ترقیاتی کاموں کے لیے 1125 کروڑ روپے کا پیکیج لے کر آئی ہے۔ ملک کو آزاد ہوئے 75 سال ہوچکے ہیں۔ ان 75 سالوں میں آج تک پنجاب میں اکالیوں، کانگریس اور اکالی-بی جے پی کی حکومتیں اقتدار میں آئی ہیں، لیکن کسی نے بھی بھٹنڈہ کے لیے کروڑوں روپے کا پیکج دینے کا کوئی اعلان نہیں کیا۔ بھٹنڈہ کے لوگ جب بھی حکومت کے پاس جاتے تھے تو کہتے تھے کہ پیسے نہیں ہیں۔ پچھلے ہفتے ہم گورداسپور گئے۔ AAP حکومت نے گورداسپور میں ترقیاتی کاموں کے لیے 1850 کروڑ روپے کا پیکیج دیا ہے۔ اس سے پہلے ہوشیار پور لوک سبھا حلقہ کے لیے 850 کروڑ روپے کا پیکیج دیا گیا تھا۔ 1125 کروڑ روپے سے بھٹنڈہ کے کونے کونے میں ترقی ہوگی۔ بھٹنڈہ لوک سبھا حلقہ میں سات بڑے نئے سرکاری اسکول بنائے جائیں گے۔ جو اسکول بنیں گے وہ بڑے پرائیویٹ اسکولوں کو بھی پیچھے چھوڑ دیں گے۔ ان سکولوں میں تمام تعلیم مفت ہوگی۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ 1125 کروڑ روپے کے پیکیج سے بھٹنڈہ لوک سبھا حلقہ میں بہترین اسپتال بنائے جائیں گے اور ہر طرح کا علاج مفت ہوگا۔ اس وقت بھٹنڈہ میں 25 محلہ کلینک ہیں۔ اس رقم سے مزید 13 محلہ کلینک بنائے جائیں گے۔ ادویات، ٹیسٹ سمیت تمام علاج مفت ہوں گے۔ بھٹنڈہ میں واقع پرانا ملتانیہ اوور برج پر بہت ٹریفک ہے۔ یہاں ایک اوور برج بنایا جائے گا۔ جنتا نگر ریلوے پر اوبر پل تعمیر کیا جائے گا۔ سیوریج، سڑک اور پانی کا کام کیا جائے گا۔ ایک نیا بس اسٹینڈ بھی بنایا جائے گا۔پنجاب میں اتنا کام کسی حکومت نے نہیں کیا ہوگا۔ پچھلے 75 سالوں میں اکالی، کانگریس اور بی جے پی حکومتوں نے کوئی خاص کام نہیں کیا۔ لیکن اگر آپ پنجاب میں کسی سے پوچھیں کہ بھگونت مان کی قیادت میں عام آدمی پارٹی کی حکومت نے کیا کام کیا ہے تو لوگ بہت سارے کاموں کی فہرست دیں گے۔ اے اے پی حکومت کا سب سے بڑا کام بجلی مفت کرنا تھا۔ ڈیڑھ سال پہلے جب ہماری حکومت بنی تو 8-10 گھنٹوں بجلی بند رہی۔ آج پنجاب میں 24 گھنٹے بجلی ہے اور بجلی کا بل صفر ہے۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ کچھ میڈیا والوں نے پوچھا کہ اتنے پیسے کہاں سے آتے ہیں، جب کہ کیپٹن اور بادل صاحب کہتے تھے کہ حکومت خسارے میں چل رہی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی حکومت کے پاس اتنا پیسہ کہاں سے آتا ہے؟ جیسے ہی پنجاب میں AAP کی حکومت بنی، ہم نے ان کی کتابوں اور کھاتوں کا جائزہ لینا شروع کر دیا اور بہت بڑی کرپشن پائی وہ 10 روپے کا کام 100 روپے میں کروا رہے تھے، جب کہ ہم 10 روپے کا کام 8 روپے میں کرواتے ہیں۔ ہم نے دیکھا کہ کئی جگہوں پر فضول خرچی ہو رہی ہے۔ کاغذ پر ایک ہی سڑک دس بار بنائی گئی ہے جبکہ حقیقت میں سڑک نہیں بنی۔ اب ہم یہ سارا پیسہ بچا رہے ہیں اور اب پنجاب میں پیسے کی کمی نہیں ہونے دیں گے۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ پنجاب میں 20 ہزار سرکاری اسکول ہیں۔ اب ان تمام سرکاری اسکولوں کی مرمت ہو رہی ہے۔ تمام اسکولوں میں کچھ کام ہو رہا ہے۔ ہم پنجاب کے تین کروڑ لوگوں کو اپنا خاندان سمجھتے ہیں۔ جیسے میرے بچے ہیں آپ کے بھی بچے ہیں۔ ہم آپ کے بچوں کو اپنی اولاد سمجھتے ہیں۔ آپ کے بچوں کو اچھی تعلیم دلانا ہماری ذمہ داری ہے۔ اگر آپ کے بچوں کو اچھی تعلیم نہیں ملے گی تو ہم رات کو سو نہیں پائیں گے، کھانا ہضم نہیں کر پائیں گے۔ ہم آپ کے بچوں کے لیے اس سے بہتر تعلیم کا بندوبست کریں گے جو ہم اپنے بچوں کو دے رہے ہیں۔ پنجاب بھر کے سرکاری اسکولوں کی مرمت ہم اساتذہ کو بیرون ملک تربیت کے لیے بھیج رہے ہیں اور پنجاب بھر میں بہترین اسکول اور اسپتال بنائے جا رہے ہیں۔ تمام سرکاری اسپتالوں کی مرمت ہو رہی ہے۔ ایک دو ماہ میں تمام سرکاری اسپتال بہترین ہو جائیں گے اور وہاں تمام علاج مفت ہوگا۔
وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ اے اے پی حکومت نے اب تک پنجاب میں 42 ہزار سرکاری نوکریاں فراہم کی ہیں۔ پہلے اکالیوں اور کانگریس کی حکومتوں میں سرکاری نوکریاں پیسے اور سفارش کے بغیر نہیں ملتی تھیں، وہیں AAP کی حکومت میں اب تمام سرکاری نوکریاں پیسے اور سفارش کے بغیر ملتی ہیں۔ جو مستحق ہیں اسے نوکری مل رہی ہیں۔ تمام خام ملازمین کی تصدیق کی جا رہی ہے۔ انتخابی مہم کے دوران ہم نے دیکھا کہ کئی جگہوں پر کچے ملازمین ٹینکوں پر سوار پائے گئے اور آج تمام ملازمین اپنے دفاتر کے اندر کام کر رہے ہیں۔
ہمیں یقین ہے کہ پنجاب کے لوگ اگلی بار بھی 117 میں سے 110 سے زیادہ سیٹیں AAP کو دیں گے: اروند کیجریوال
آپ کے قومی کنوینر اروند کیجریوال نے کہا کہ ہم نے رنگلا پنجاب کا خواب دیکھا تھا۔ پنجاب کے لوگوں نے دہلی میں ہمارا کام دیکھ کر ہمیں ووٹ دیا۔ اب یہ تمام پارٹی والے بہت اداس ہیں۔ وہ محسوس کرنے لگے ہیں کہ اب ان کی ضرورت ختم ہو گئی ہیں۔ اب ان کو دوبارہ کوئی ووٹ نہیں دے گا۔ دہلی کے لوگوں کی طرح پہلی بار ہمیں 70 میں سے 28 سیٹیں دی گئیں، دوسری بار ہمیں 67 اور تیسری بار 62 سیٹیں دی گئیں۔ پنجاب کے عوام نے 117 میں سے 92 سیٹیں دیں اور میرا دل کہتا ہے کہ اگلی بار 117 میں سے 110 سے زیادہ سیٹیں عام آدمی پارٹی کو جائیں گی۔ اب لوک سبھا انتخابات بھی قریب ہیں۔ پنجاب میں لوک سبھا کی 13 اور چندی گڑھ میں ایک سیٹ ہے۔ پنجاب کے عوام آپ حکومت کے کاموں سے خوش ہیں۔مجھے پوری امید ہے کہ پنجاب کے عوام تمام 13 سیٹیں عام آدمی پارٹی کو دے کر ہمارے ہاتھ مضبوط کریں گے۔
دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ یہ تمام پارٹیاں ہمارے خلاف اکٹھی ہوئی ہیں اور انہیں کام کرنے سے روکنے کے لیے مرکزی حکومت سے رجوع کیا۔مرکزی حکومت نے پنجاب کا حصہ دیا ہے۔صحت کی دیکھ بھال کی ادائیگی بند کردی۔ جب مرکزی حکومت نے صحت کے لیے فنڈنگ روک دی تو AAP حکومت نے پنجاب کے مختلف مقامات پر محلہ کلینک کھولے۔ کسان اپنی فصل فروخت کرنے منڈی میں آتے ہیں۔ مرکزی حکومت نے سڑکوں کی تعمیر کے لیے 5.5 ہزار کروڑ روپے روکے۔ وزیر اعلی بھگونت مان نے کہا ہے کہ چاہے مرکزی حکومت پیسے نہیں دے گی۔ میں اپنے کسانوں کے لیے سڑکیں بناؤں گا۔ مرکزی حکومت نے اس وقت حد کر دی جب انہوں نے سری حضور صاحب اور سری پٹنہ صاحب کی یاترا پر جانے والی ٹرین کو روک دیا۔ مرکزی حکومت کی طرف سے خط آیا ہے کہ ہم آپ کو زیارت پر بھیجنے کے لیے ٹرین نہیں دیں گے۔ خط ملنے کے بعد وزیر اعلی بھگونت مان افسردہ ہوئے۔مرکزی حکومت کس طرح ہمارے لوگوں کو ناخوش کر رہی ہے۔ اگر آپ زیارت کرنے میں کسی کی مدد کرتے ہیں تو آپ کو بھی کچھ نیکی ملتی ہے۔ لیکن اگر آپ کسی کو زیارت کرنے سے روکیں گے تو خدا آپ کو معاف نہیں کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی بھگونت مان نے فیصلہ کیا ہے کہ اگر مرکزی حکومت ٹرینیں فراہم نہیں کرتی ہے تو بھی پنجاب کے بزرگوں کو سری حضور صاحب اور سری پٹنہ صاحب لے جایا جائے گا۔ ٹرین کا متبادل حل تلاش کیا جائے گا۔ لیکن مرکزی حکومت کے منصوبوں کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل وہ دہلی میں کام کر چکے ہیں۔ہمارے کام کو روکنے کی بہت کوششیں بھی کیں۔ کبھی محلہ کلینک کا کام روک دیا، کبھی سڑکوں کا اور کبھی سی سی ٹی وی کیمروں کا، لیکن میں نے ایک کام بھی نہیں ہونے دیا اور سارا کام کیا۔ اسی طرح پنجاب میں بھی کوئی کام نہیں رکے گا، پنجاب کو رنگلا پنجاب بنانے کا خواب ہم سب مل کر پورا کریں گے۔
اس موقع پر پنجاب کے وزیراعلی بھگونت مان نے کہا کہ پنجاب میں کئی سالوں سے صرف سیاست ہو رہی ہے۔ لوگوں کے پاس امید کی کوئی کرن نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ 16 دسمبر کو پہلی بار پنجاب کے سرکاری اسکولوں میں پڑھنے والے بچوں کے والدین نے اپنے اساتذہ سے ملاقات کی۔ ان سرکاری اسکولوں میں پہلی بار اتنے بڑے پیمانے پر والدین اور اساتذہ کی میٹنگ ہوئی ہے۔ پنجاب کے اسکولوں میں والدین اور اساتذہ کی ایسی ملاقاتیں بند ہو گئی تھیں لیکن ہم پنجابی ہیں ہمت نہیں ہارتے۔ انہوں نے کہا کہ سرپنچ سے لے کر وزیر اعلیٰ تک سب کو عام لوگ ہی بناتے ہیں۔ جب آپ لوگ میرے ساتھ ہوتے ہیں تو میں کسی چیز سے نہیں ڈرتا۔ کچھ لوگوں میں بہت بے چینی ہے کہ ایک عام آدمی پارٹی کرسی تک کیسے پہنچ گئی اور سب کچھ سنبھالنا بھی سیکھ گئے۔ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو ان کی باری کبھی نہیں آئے گی۔ بادل خاندان کی پوری پلٹن نے شکست تسلیم کر لی ہے۔ اب صرف ایک رہ گیا ہے جسے اب ہمیں بھٹنڈہ سے ہرانا ہے۔ یہ لوگ اپنے آپ کی جاگیر سمجھنے لگے ہیں۔ وزیر اعلیٰ بھگونت مان نے کہا کہ دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے دہلی میں جو بھی کام کیا، ہم نے پنجاب میں ان کے تجربے کا استعمال کیا۔ آج سرکاری اسکولوں کے بچوں میں بھی اتنا اعتماد ہے کہ وہ جج، ڈاکٹر، انجینئر اور آئی اے ایس بننا چاہتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ فتح گڑھ اسکول سے نویں جماعت کا طالب علم نے بتایا کہ پہلے میں ریڈیولوجسٹ بنوں گا پھر الیکشن لڑوں گا اور وزیراعلیٰ بنوں گا۔ عام آدمی پارٹی کے آنے سے پہلے لوگ سیاست کو غنڈوں اور امیروں کا کام سمجھتے تھے۔ یہ صرف اروند کیجریوال کے آنے سے ہی ممکن ہوا ہے کہ آج آٹھویں سے نویں کلاس کا بچہ بھی وزیر اعلیٰ بننے کی بات کر رہا ہے۔ عام آدمی پارٹی حکومت بنائے گی۔تب سے پنجاب کے عوام میں اعتماد پیدا ہوا ہے۔ ایک طرف پی ایم مودی ڈبل انجن والی حکومت کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف کہتے ہیں کہ اس کے پاس کوئی انجن نہیں: بھگونت مان وزیر اعلیٰ بھگونت مان نے کہا کہ ہماری حکومت عوام کے حق میں فیصلے کرتی ہے۔ مرکزی حکومت نے محلہ کلینک کی فنڈنگ روک دی۔ انہوں نے کہا کہ پہلے محلہ کلینک بند کرو، تب ہی پیسے ملیں گے۔ اس کے علاوہ انہوں نے کسانوں کی ترقی کے لیے 5,500 کروڑ روپے کے RDF فنڈ کو روک دیا۔ اگر یہ رقم مل جائے تو سات آٹھ ہزار کلومیٹر سڑکیں بن سکتی ہیں۔ جب ہم نے یاترا کا منصوبہ شروع کیا تو انہوں نے ہمیں 7 اور 15 تاریخ کو یہ کہہ کر ٹرینیں نہیں دیں کہ ان کے پاس ٹرین نہیں ہیں۔ ایک طرف وزیر اعظم نریندر مودی ڈبل انجن والی حکومت کی بات کرتے ہیں اور دوسری طرف ریلوے کہتے ہیں کہ اس کے پاس کوئی ٹرین نہیں ہے۔ لیکن اب پنجاب میں ایماندار حکومت ہے اور ہماری اپنی ریونیو جنریشن بھی ہے۔ عوام کا پیسہ عوام پر خرچ ہوتا ہے۔ ہمارا کوئی کام نہیں رکے گا۔ ہم سب مل کر کام کریں گے اور پنجاب کو رنگلا پنجاب بنائیں گے۔

Related posts

ایم ایل اے درگیش پاٹھک نے ٹوڈا پور گاؤں میں جدید چوپال کی تعمیر کا سنگ بنیاد رکھا

Paigam Madre Watan

हीरा ग्रुप ने सोने का व्यापार व्यवसाय शुरू किया

Paigam Madre Watan

کیجریوال کو انتخابات سے دور رکھنے کی بی جے پی کی سازش ناکام، ضمانت پر باہر آنے کے بعد وہ شاندار مہم چلا رہے ہیں: دلیپ پانڈے

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar