Delhi دہلی

مودی سرکار کا سوتیلی ماں والا سلوک، یوم جمہوریہ پر دہلی اور پنجاب کی جھانکی کی اجازت نہیں دی : AAP

کیجریوال حکومت پریڈ میں جھانکی پر دہلی کا دنیا کا مشہور تعلیمی-صحت ماڈل دکھانا چاہتی تھی، لیکن اجازت نہیں ملی: پرینکا ککڑ


بی جے پی کی حکومت والے آسام، گجرات، اتراکھنڈ اور اتر پردیش میں مسلسل مواقع دیے جا رہے ہیں، لیکن دہلی-پنجاب کو پچھلے دو سالوں سے نہیں مل رہا ہے


نئی دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز)26 جنوری کو یوم جمہوریہ کے موقع پر ہونے والی پریڈ کے دوران دہلی اور پنجاب حکومت کی جھانکی نظر نہیں آئے گی ۔ عام آدمی پارٹی کا کہنا ہے کہ مودی حکومت نے یوم جمہوریہ کی پریڈ میں قومی راجدھانی دہلی اور پنجاب کے ساتھ ایک بار پھر سوتیلی ماں والا سلوک کیا ہے۔جھانکی لانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا گیا ہے۔ AAP کی چیف ترجمان پرینکا ککڑ نے جمعرات کو پارٹی ہیڈکوارٹر میں پریس کانفرنس کی اور اس معاملے کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی کا ماڈل ملک کے سامنے پیش کیا ہے۔ دہلی کا مشہور تعلیم اور صحت کا ماڈل حکومت اسے پریڈ میں جھانکی پر دکھانا چاہتی تھی لیکن افسوس کہ پچھلے سال کی طرح اس بار بھی مودی حکومت نے اجازت نہیں دی۔ دوسری طرف، بی جے پی کی حکومت والے آسام، گجرات، اتراکھنڈ اور اتر پردیش کو مسلسل پریڈ میں جھانکیوں کو شامل کرنے کا موقع دیا جا رہا ہے۔ پرینکا ککڑ نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کاش، پی ایم مودی کا دل دہلی کے لوگوں جتنا بڑا ہوتا تو دہلی بھی یوم جمہوریہ پر اپنا نمونہ ملک کے سامنے پیش کر پاتی۔عام آدمی پارٹی کی چیف ترجمان پرینکا ککڑ نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے دہلی ماڈل کو ملک کے سامنے رکھا ہے۔ اس ماڈل کے تحت، دہلی میں ملک میں سب سے کم مہنگائی اور سب سے زیادہ فی کس آمدنی ہے۔ اس ماڈل میں 200 یونٹ بجلی مفت ہے اور اس کے اوپر یہ ملک میں سب سے کم نرخوں پر بجلی دستیاب ہے۔ اس ماڈل کے تحت دہلی میں گزشتہ 10 سالوں میں تقریباً 30 فلائی اوور بنائے گئے ہیں، جو کہ تخمینہ لاگت سے بہت کم پر بنائے گئے تھے اور اس کے نتیجے میں 557 کروڑ روپے کی بچت ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی ماڈل کے تحت دہلی میں الیکٹرک گاڑیوں کے لیے سب سے زیادہ چارجنگ پوائنٹس اور اسٹیشن بنائے گئے ہیں۔ یہ ایک بہت اچھی الیکٹرک وہیکل پالیسی ہے، جس کے تحت ملک میں سب سے زیادہ 17 فیصد الیکٹرک گاڑیاں رجسٹر کی گئی ہیں۔ اس ماڈل کے تحت اب تک 1,300 برقی بس آچکی ہے۔ یہ تعداد ملک میں سب سے زیادہ ہے۔آپ کی ترجمان پرینکا ککڑ نے کہا کہ صحت اور تعلیم کا ماڈل دہلی کا فخر ہے۔ دہلی کی حکومت اور لوگ تعلیم کو بہت اہمیت دیتے ہیں۔ تعلیم بہترین دولت ہے۔ دہلی ماڈل کے لیے مرکزی حکومت کے تھنک ٹینک یعنی نیتی آیوگ کا کہنا ہے کہ دہلی کے سرکاری اسکول ملک کے ٹاپ 10 میں ہیں، کیونکہ یہاں کی تعلیم میں نمایاں تبدیلیاں دیکھی گئیں۔ ملک کے سابق صدر پرنب مکھرجی نے بھی دہلی حکومت کے سرکاری اسکولوں کی اسی طرح تعریف کی تھی۔ اسی دوران جب امریکہ کی سابق خاتون اول میلانیا ٹرمپ ہندوستان آئیں تو وہ بھی دہلی کے سرکاری اسکول دیکھنے آئیں تھیں۔ترجمان پرینکا ککڑ نے کہا کہ یہ ہماری صحت یعنی ہیلتھ ماڈل ہے، جس کی ہر جگہ تعریف ہو رہی ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ آج کل بی جے پی دہلی کے ہیلتھ ماڈل پر مسلسل حملے کر رہی ہے۔بہت سے لوگ باہر کی ریاستوں سے بھی دہلی آتے ہیں جن میں سے زیادہ تر کا تعلق یوپی سے ہے اور یہ لوگ اپنی ریاست واپس جا کر دہلی کے ہیلتھ ماڈل کی تعریف کرتے ہیں۔ بی جے پی یہ باتیں ہضم نہیں کر سکتی۔ اس لیے وہ دہلی کے ہیلتھ ماڈل پر لگاتار حملے کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دہلی کے ہیلتھ ماڈل کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ اقوام متحدہ کے سابق صدر بان کی مون اور سیکرٹری جنرل کوفی عنان نے اس کی تعریف کی تھی، درحقیقت بان کی مون نے یہاں تک کہا تھا کہ وزیر اعظم مودی کو بھی اس کی تعریف کرنی چاہیے۔ اس ماڈل کو آگے بڑھائیں. دہلی دل والوں کی ہے۔ملک کی مختلف ریاستوں اور بیرون ملک سے بڑی تعداد میں لوگ یہاں تعلیم، علاج اور ملازمت کے لیے آتے ہیں۔ دہلی سب کو قبول کرتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ دہلی حکومت یوم جمہوریہ کی پریڈ میں صحت اور تعلیم کے ماڈل کو دکھانا چاہتی تھی اور یہ دکھانا چاہتی تھی کہ پچھلے کچھ سالوں میں دہلی میں ان دونوں میں بہتری آئی ہے۔ماڈلز کے ذریعے اتنی تبدیلی دیکھی گئی ہے لیکن یہ بہت افسوسناک ہے کہ ایسا نہیں ہونے دیا گیا۔آپ کی پرینکا ککڑ نے کہا کہ یوم جمہوریہ کی پریڈ میں دہلی اور پنجاب کے جھانکیوں کو شرکت کی اجازت نہ دینا بی جے پی کی گندی سیاست کو ظاہر کرتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی بی جے پی کی حکومت والے آسام، اتر پردیش، اتراکھنڈ کو یوم جمہوریہ پریڈ میں مسلسل موقع دیا جا رہا ہے، لیکن پچھلی بار کی طرح اس بار بھی دہلی اورپنجاب کی دونوں ریاستوں کو سائیڈ لائن کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر ملک کے وزیر اعظم کے پاس دہلی کے لوگوں جیسا بڑا دل ہوتا تو وہ دہلی کو یوم جمہوریہ پریڈ میں شرکت کا موقع دیتے۔ دہلی ملک کی راجدھانی ہے اور ہمارے لیے یہاں کا صحت اور تعلیم کا ماڈل فخر کی بات ہے، اگر دہلی حکومت کو بھی موقع ملے۔اگر اسے مل جاتی تو وہ یوم جمہوریہ کی پریڈ میں تعلیم اور صحت کے ماڈل کو ملک کے سامنے پیش کر پاتی۔

Related posts

عام آدمی پارٹی نے سخت انتخابی عمل کے بعد مشن 2024 کے لیے 20 امبیڈکر فیلوز کو شامل کیا

Paigam Madre Watan

وطن عزیز ہندوستان کاآئین متنوع ثقافتوں اور تہذیبوں کا محافظ ہے:مولانا محمد اظہر مدنی

Paigam Madre Watan

کیجریوال حکومت کی آئی ٹی آئی نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا – 2023-24 میں 72 فیصد سے زیادہ آئی ٹی آئی طلباء نے جگہ حاصل کی: وزیر تعلیم آتشی

Paigam Madre Watan

Leave a Comment