Delhi دہلی

کیجریوال حکومت نے ملک کے شہیدوں کی یاد میں ترنگا اتسو کا اہتمام کیا

ترنگا اتسو کے ذریعے ہم ان شہیدوں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے ملک کی آزادی کے لیے ہنستے ہنستے پھانسی کے پھندے کو چوما: گوپال رائے


نئی دہلی(پی ایم ڈبلیو نیوز)یوم جمہوریہ کے موقع پر دہلی حکومت نے جمعہ کو ملک کے شہیدوں کو یاد کرنے کے لیے ترنگا اتسو کا اہتمام کیا۔ اس پروگرام کا انعقاد دہلی حکومت کے فریڈم فائٹرز سیل نے بابر پور بس ٹرمینل کے قریب کیا تھا جس میں جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ کے وزیر گوپال رائے مہمان خصوصی تھے۔ یوم جمہوریہ پر دہلی اور ملک کے لوگوں کو مبارکباد دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہر سال ترنگا میلہ منعقد کرکے ہم اپنے ملک کے شہیدوں کو سلام پیش کرتے ہیں، جنہوں نے ملک کی آزادی کے لیے پھانسی کے پھندے کو مسکراتے ہوئے چوما۔ اس دوران ثقافتی اور تھیٹر کے پروگراموں کے ذریعے لوگوں میں حب الوطنی کا جذبہ پیدا کیا گیا۔ اس کے علاوہ، ہم یہ پیغام دینے کی کوشش کرتے ہیں کہ ہمیں اپنے خاندان کے ساتھ ساتھ ملک کے لیے بھی جینا ہے۔ترنگا اتسو پروگرام کے دوران کابینی وزیر گوپال رائے نے کہا کہ پورا ملک 26 جنوری کو یوم جمہوریہ منا رہا ہے۔ ہر سال ہم بابر پور اسمبلی کے اس بس ٹرمینل میں عید ملن اور دیوالی ملن اور 26 جنوری کو ترنگا اتسو پروگرام منعقد کرتے ہیں۔ پروگرام میں تمام مذاہب اور تمام معاشروں کے لوگ اکٹھے ہو کر ترنگے کو عزت دیتے ہیں اور ان شہیدوں کو سلام پیش کرتے ہیں جنہوں نے ہنستے ہوئے ملک کی آزادی کے لیے پھندا کو چوما اور اس ملک کے لیے اپنا سب کچھ قربان کر دیا۔انہوں نے کہا کہ آج 75 سال گزرنے کے بعد بھی شاید ہم اس بات کا ادراک نہیں کر پا رہے کہ جب ہمارا ملک غلام تھا تو اس ملک کے تمام لوگوں نے مل کر آزادی کے لیے کس طرح جانیں قربان کیں۔ کس طرح ہندو مسلم خواتین، مرد، قبائل، دلت اور ملک کے کونے کونے اور ہر زبان کے لوگ اس ملک کی آزادی کے لیے لڑے۔ قربانی دیں۔ ہم ترنگا اتسو کا اہتمام کرکے ان شہیدوں کو یاد کرتے ہیں۔وزیر گوپال رائے نے کہا کہ اس ترنگا تہوار کے ذریعے ہم یہ پیغام دینے کی کوشش کرتے ہیں کہ ہمیں اپنے اور اپنے خاندان کے ساتھ ساتھ اس ملک کے لیے بھی جینا ہے۔ اس تہوار میں ہم ثقافتی پروگراموں اور ڈراموں کے ذریعے ان شہداء کو یاد کرتے ہیں اور لوگوں کے دلوں میں حب الوطنی کا جذبہ بیدار کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ اس بار یوم جمہوریہ پر ترنگا میلے میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ہے۔

Related posts

اس بار پنجاب کسانوں کے ساتھ ہونے والی ناانصافی کا بدلہ لے گا: کیجریوال

Paigam Madre Watan

 این ایس ایس کے ذریعہ  طلباء و طالبات سماج کے بنیادی مسائل سے روبرو ہوتے ہیں

Paigam Madre Watan

اردو ایک زبان نہیں، تہذیب ہے۔ اس کو شایانِ مرتبہ دیا جائے گا۔ ارویندر سنگھ لولی

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar