Delhi دہلی

شعیب الرحمن عزیز کی کتاب ”ہندوستان میں سلطنت مغلیہ کا دور “اشاعت ثانیہ کا اجراء

مقبولیت کو دیکھتے ہوئے ہندوستان کے معتبر مکتبہ ’الفہیم ‘ مئو ناتھ بھنجن نے شائع کی

نئی دہلی ( پی ایم ڈبلیو نیوز) شعیب الرحمن عزیز کی کتاب ”ہندوستان میں سلطنت مغلیہ کا دور “ اشاعت ثانیہ کا اجراءدہلی کے آل انڈیا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی کے دفتر میں عمل میں آیا ۔ اس موقع پر دہلی کے درجنوں اخبارات کے صحافیوں نے شرکت کی اور مو ¿لف کو مبارکبادیںبھی پیش کیں ۔ جن میں خصوصی طور پر آل انڈیا مہیلا امپاورمنٹ پارٹی، اتر پردیش کے صدر اور روزنامہ پیغام مادر وطن کے ایڈیٹرمطیع الرحمن عزیز ،محمد مصطفی سینئر صحافی وایڈیٹر روزنامہ ملاپ نئی دہلی ، سیاسی تقدیر گروپ کے منیجر و ایڈیٹر روزنامہ سیاسی منظر ایاز احمد خان، روزنامہ نوائے ملک کے ایڈیٹر ارشد شریف ، ماسٹر ذاکر حسین ، سرودیہ بال ودیالیہ دہلی سرکار ، محمد ریحان مارڈرن اسکول آف لینگیوجیز، اطیع الدین وزیر آباد،عامر اختر چیف رپورٹر سیاسی تقدیر دہلی ، عتیق الرحمن سونیا وہار، عبد الرقیب وزیر آباد نے شرکت کی اور مو لف کو اپنی نیک خواہشات اور دعاﺅں سے نوازا ۔اس کتاب کے بارے بات کرتے ہوئے مولف نے کہا کہ آج کے موجودہ حالات میں خصوصا سیاسی جماعتوں کا مغل بادشاہوں پر زبانی یلغار کو دیکھتے ہوئے ہندوستان کے مدارس ومکاتب میں زیر درس رکھنے کی ضرورت ہے،اور میںمکاتب و مدارس کے ذمے داران سے کتاب کو ہدیہ دے کر گزارش کروںگا کہ وہ اپنے مدارس و مکاتب میں اس کتاب کو زیر درس رکھیں ۔

مجھے امید ہے کہ تاریخ ہندوستان میں اس کتاب جیسی آسان، مختصر اور بہتر جانکاری کی کوئی دوسری کتاب موجود نہیں ہے جو بچوں کو آسانی سے سمجھ آ جائے اور انہیں یاد رکھنے میں بھی آسانی ہو۔ کتاب کی پہلی اشاعت میں جو خامیاں اور غلطیاں تھیں انہیں اشاعت ثانیہ میں دور کردیا گیا ہے۔مو ¿ لف نے مزید بتایا کہ کتاب کی پہلی اشاعت کم تعداد میں ہوئی تھی جس کی وجہ سے کتاب اتنی تقسیم نہیں ہو پائی جتنی ہونی چاہئے تھی اور زیادہ تر لوگو ں کو مایوس ہونا پڑا ۔ لیکن اس بار ایسا نہیں ہے، الحمداللہ کتاب بڑی تعداد میں چھپی ہے اور جنہیں اس کتاب کو حاصل کرنا ہے وہ مکتبہ فہیم، مﺅ ناتھ بھنجن کے ذمے داران سے رابطہ کر کے کم قیمت میںاپنے گھر منگوا سکتے ہیں (رابطہ نمبر درج ذیل ہیں :9889123129،9336010224)۔مولف نے کہا کہ اس کتاب کی ترتیب کچھ اس طرح ہے کہ سب سے پہلے لوگوں کے تاثرات و مقدمہ رکھا گیا ہے۔اس کے علاوہ مغلوں کے دور میں ہندوستانی معیشت کا کیا حال تھا اچھے انداز میں ذکر کیا گیا۔ سلطنت مغلیہ کے تمام بادشاہوں یعنی ظہیر الدین محمد بابر سے آخری بادشاہ و مجاہد آزادی بہادر شاہ ظفرتک کا ذکر مختصراََ َاوراچھے انداز میں کیا گیا ہے۔ بر صغیر میں سلطنت مغلیہ کی تعمیر کردہ عمارات کی تفصیلات بھی ذکر کی گئی ہیں ، بادشاہوں کی بیگمات و اولاد کا مختصر تعارف بھی درج ہے۔ علاوہ ازیں سلطنت مغلیہ کے عروج وزوال پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ مختصر طور پر کہا جائے تو اس کتاب میں مغلیہ سلطنت کی تاریخ او ل تا آخر مختصراََذکر کی گئی ہے، اس کوپڑھنے کے بعد مغلوں کی بہت ساری جانکاریاںحاصل ہو جاتی ہے ۔اخیر میں مولف نے اشاعت ثانیہ پر مکتبہ الفہیم ، مﺅ ناتھ بھنجن کے ذمے داران کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور اس کتاب کو والدین اور اقرباءکےلئے نفع بخش ہونے کی دعا بھی کی ۔

Related posts

بھاشا سنگم فورم کے تحت لال بہادر شاستری کالج بنگلور میں ڈاکٹر حافظؔ کرناٹکی کا خطاب

Paigam Madre Watan

ایڈیشنل کمشنر آف پولیس چندرکانتا اور جعفرآباد پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او سریندر سنگھ کا جعفرآباد جنت بینکویٹ ہال میں شاندار استقبال کیا

Paigam Madre Watan

سنہری باغ مسجد معاملہ: انڈین یونین مسلم لیگ کے رکن پارلیمان ای ٹی محمد بشیر نے چیف آرکیٹکٹ کو مکتوب کے ذریعے رائے دی

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar