Delhi دہلی

کیجریوال نے پنجاب کی وکاس کرانتی ریلی میں کہا کہ آپ کی حکومت ایماندار ہے، اسی لیے پنجاب میں اتنے بڑے کام ہو رہے ہیں

دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان نے گورداسپور میں بابا بندہ سنگھ بہادر انٹر اسٹیٹ بس ٹرمینل کا افتت کیا


نئی دہلی؍پنجاب(پی ایم ڈبلیو نیوز)عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر اور دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور پنجاب کے وزیر اعلی بھگونت مان نے ہفتہ کو گورداسپور میں بابا بندہ سنگھ بہادر انٹر اسٹیٹ بس ٹرمینل کا افتتاح کیا۔ اس کے علاوہ وزیر اعلی بھگونت مان نے گورداس پور لوک سبھا حلقہ میں مختلف ترقیاتی کاموں کے لیے 1854 روپے دیے ہیں۔کروڑ روپے کے پیکیج کا بھی اعلان کیا۔ اس دوران وکاس کرانتی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ عام آدمی پارٹی کی حکومت ایماندار ہے۔ اسی لیے پنجاب میں اتنے بڑے کام ہو رہے ہیں۔دوسری پارٹیوں نے پنجاب کا خزانہ خالی کر دیا تھا، لیکن ایماندار AAP کی حکومت ہی تھی۔ڈیڑھ سال میں خالی خزانہ بھر گیا اور یہ عوام کی تمام ضروریات پوری کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2014 میں AAP کو پنجاب میں چار سیٹیں ملی تھیں۔ اس بار ہمیں عوام کی طرف سے بہت زیادہ آشیرواد مل رہے ہیں اور میرا دل کہتا ہے کہ اس بار عام آدمی پارٹی پنجاب میں تمام سیٹیں حاصل کرے گی۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ مجھے نہیں لگتا کہ پنجاب نے پہلے کبھی ایسا ترقیاتی انقلاب دیکھا ہوگا۔ آج، آپ حکومت کی طرف سے ایک ہی لوک سبھا حلقہ میں 1854 کروڑ روپے کے کام شروع کیے جا رہے ہیں۔ مجھے لگتا ہے کہ اگر پچھلے 75 سالوں میں کیے گئے تمام کاموں کو بھی شامل کر لیا جائے تو پھر بھی گورداسپور میں 1854 کروڑ روپے باقی رہ جائیں گے۔پیسہ کارآمد نہ ہوتا۔ گزشتہ ہفتے ہوشیار پور میں 850 کروڑ روپے کے ترقیاتی کاموں کا آغاز کیا گیا۔ اس سے پہلے دھوری میں پنجاب کے لوگوں کے لیے مفت زیارت کا منصوبہ شروع کیا گیا تھا۔ آج پنجاب بہت تیزی سے ترقی کر رہا ہے۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ آج ہم نے گورداسپور میں بابا بندہ سنگھ بہادر انٹر اسٹیٹ بس ٹرمینل کا افتتاح کیا ہے۔ گورداسپور کے لوگوں کا دیرینہ مطالبہ تھا کہ بس ٹرمینل بنایا جائے جو کسی پارٹی نے پورا نہیں کیا۔ دوسری پارٹیوں کے لوگ کہتے تھے کہ پیسہ نہیں ہے۔ اس وقت بھی پیسہ تھا لیکن وہ سب پیسے کھاتے تھے۔ اب آپ کی پنجاب میں ایماندار حکومت ہے۔ میں یقین دلاتا ہوں کہ حکومت میں پیسے کی کوئی کمی نہیں ہے۔ پنجاب کا خزانہ بھرا ہوا ہے۔ ہم نے سرکاری خزانہ بھر دیا جو ان لوگوں نے صرف ڈیڑھ سال میں خالی کر دیا۔ اس رقم سے ہم پنجاب کے عوام کی تمام ضروریات پوری کریں گے۔ انتخابات سے پہلیسوال صرف یہ تھا کہ پنجاب کا خزانہ خالی ہے۔ آپ کی حکومت بن گئی تو آپ حکومت کیسے چلائیں گے؟ پیسے کہاں سے لائیں گے؟ہم نے جواب دیا تھا کہ جب حکومت بنے گی تو پھر حکومت بھی چلائیں گے۔ اے اے پی حکومت کو بنے صرف ڈیڑھ سال ہی گزرا ہے۔ پھر بھی ہماری حکومت کا کوئی افسر، وزیر یا ایم ایل اے یہ نہیں کہتا کہ پنجاب حکومت کا خزانہ خالی ہے۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ پنجاب میں ہماری حکومت ہے۔ ہر کوئی اپنی حکومت کی تعریف کرنا جانتا ہے لیکن جب عوام اس کی تعریف کرنے لگے تو یہی سب سے بڑی بات ہے۔ کچھ دن پہلے دہلی سے کچھ لوگ امرتسر آئے اور ہوٹل میں ٹھہرے۔ امرتسر کے دورے کے دوران انہوں نے عوام کو عام آدمی پارٹی کی حکومت کے بارے میں آگاہ کیا۔انہوں نے پوچھا. وہ دہلی واپس آئے اور مجھ سے ملے اور بتایا کہ پنجاب میں بہت سے لوگوں نے بتایا کہ پہلے جب وہ تھانے جاتے تھے تو پولیس والوں کو پیسے دینے پڑتے تھے، لیکن اب پیسے نہیں دینے پڑتے۔ کچھ لوگوں نے بتایا کہ پہلے سرکاری دفاتر میں کام نہیں ہوتا تھا اور پیسے مانگے جاتے تھے لیکن اب بغیر پیسے کیکام شروع ہو چکا ہے۔ کچھ لوگوں کا کہنا تھا کہ پہلے سات آٹھ گھنٹے بجلی کی کٹوتی ہوتی تھی لیکن اب بجلی چوبیس گھنٹے ملتی ہے اور بجلی مفت ہو گئی ہے۔ آج پنجاب کے عوام آپ حکومت کے کاموں سے بہت خوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلی بار 2014 میں لوک سبھا الیکشن لڑا تھا اور ہمیں 4 سیٹیں ملی تھیں۔ ایک سیٹ 2019 میں آئی۔ اس بارہمیں عوام کی طرف سے بہت زیادہ آشیرواد مل رہے ہیں اور میرا دل کہتا ہے کہ اس بار عام آدمی پارٹی پنجاب میں تمام سیٹیں حاصل کرے گی۔وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ آج پنجاب کی عام آدمی پارٹی گورداس پور لوک سبھا حلقہ میں ترقیاتی کاموں کے لیے 1854 کروڑ روپے کا پیکیج لے کر آئی ہے۔ اس سے گرداسپور میں چاروں طرف ترقی ہوگی۔ اس رقم سے گورداسپور میں دو بڑے اور پرتعیش سرکاری اسکول بنائے جائیں گے۔ پنجاب کے پرائیویٹ اسکولوں سے بہترسرکاری اسکول بنائے جائیں گے۔ جس میں تعلیم مفت ہو گی۔ مجھے یقین ہے کہ جس دن دونوں سرکاری اسکول بن جائیں گے، گورداسپور کا امیر ترین آدمی بھی اپنے بچے کو پرائیویٹ اسکولوں سے نکال کر اس سرکاری اسکول میں داخل کرائے گا۔ اس کے علاوہ دو ضلعی اسپتالوں کو اپ گریڈ کیا جائے گا۔ دونوں اسپتالوں اس میں ایم آر آئی، ایکسرے سمیت تمام سہولیات موجود ہوں گی۔ تمام ادویات اور ٹیسٹ مفت ہوں گے۔ سڑکیں خوبصورت بنیں گی۔ سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ اور بجلی کا گرڈ لگایا جائے گا۔ گورداسپور کی تمام ضروریات اس پیکج سے پوری کی جائیں گی۔ اگر پیسے کم ہوں گے تو زیادہ دیں گے، لیکن گورداسپور کی ترقی میں کوئی کمی نہیں آئے گی۔دہلی کے وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے کہا کہ انتخابات سے پہلے ہم نے گارنٹی دی تھی کہ اگر پنجاب سے تعلق رکھنے والا کوئی فوجی فوج میں شہید ہوتا ہے تو اس کے خاندان کو ایک کروڑ روپے کا اعزازیہ دیا جائے گا۔ ہم نے اپنا وعدہ پورا کیا۔ پنجاب میں رہنے والے جتنے لوگ پچھلے ڈیڑھ سال میں شہید ہوئے ہیں، خود وزیراعلیٰ بھگونت مان ان کے گھر گئے اور انہیں ایک کروڑ روپے کا چیک دیا۔ ہم شہداء کا احترام کرتے ہیں۔ فوجی اپنی جان خطرے میں ڈال کر ملک کی حفاظت کرتے ہیں۔ کسی کی جان کی کوئی قیمت نہیں۔ اس سے پہلے جب بھی دہلی کا کوئی باشندہ شہید ہوتا تھا تو حکومت اس کی بیوہ کو سلائی مشین دیتی تھی۔ شہادت کے بعد ان کی توہین کی گئی۔ ہم نے دہلی میں بھی ایک کروڑ روپے کا اعزازیہ دینا شروع کیا اور اب پنجاب میں بھی دے رہے ہیں۔دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ گورداسپور کے لوگوں نے سنی دیول کو پچھلی بار لوک سبھا کے لیے منتخب کیا تھا۔ الیکشن جیتنے کے بعد سنی دیول کبھی آپ کے درمیان نہیں آئے، آپ لوگوں نے ان کا چہرہ تک نہیں دیکھا۔ عوام نے محسوس کیا کہ وہ ایک عظیم اداکار ہیں، اگر وہ انہیں ووٹ دیں گے تو وہ کچھ کریں گے۔ یہ بڑے لوگ کچھ کرنے والے نہیں ہیں۔ اس لیے عام آدمی کو ووٹ دیں۔ عام آدمی آپ کے لیے کچھ کرے گا، عام آدمی آپ کے فون کا جواب دے گا اور آپ کے کام آئے گا۔ اس بار ان دوسری پارٹی والوں کے جھانسے میں نہ آئیں۔ اے اے پی حکومت نے پچھلے ڈیڑھ سال میں جو کام کیا ہے اسے دیکھتے ہوئے اپنا ووٹ دیں۔ پچھلی بار بھی سنی دیول نے آپ کو دھوکہ دیا تھا، اس بار بھی دھوکہ نہ کھائیے.وزیراعلیٰ اروند کیجریوال نے کہا کہ پچھلے ہفتے ہم نے وزیراعلیٰ تیرتھ یاترا اسکیم شروع کی ہے۔ ہر انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ زندگی میں کم از کم ایک بار کہیں یاترا پر جائے۔ اپنے مذہب کے مطابق کوئی پٹنہ صاحب، کوئی دربار صاحب، شری حضور صاحب، چن پورنی ماتا، کھٹو شیام جاتے ہیں۔ ہم نے ہر ایک کے لیے مفت زیارت کرنے کا انتظام کیا ہے۔ آپ کو آپ کے گھر سے ریلوے اسٹیشن تک لے جائیں گے۔

اے سی ٹرین آپ کو یاترا پر لے جائے گی اور آپ کو درشن دے گی۔ آپ کے بارے میں پہلے کبھی کسی حکومت نے ایسا نہیں سوچا تھا۔آپ کے قومی کنوینر اروند کیجریوال نے کہا کہ پہلے یہ لوگ کہتے تھے کہ سرکاری خزانہ خالی ہے، تو اب اتنا پیسہ کہاں سے آئے گا۔ اب پنجاب میں نئے اسکول بن رہے ہیں، محلہ کلینک بنائے گئے ہیں۔ گورداسپور کے اندر 31 نئے محلہ کلینک بننے جا رہے ہیں۔ ہر گاؤں میں محلہ کلینک کھولے جائیں گے۔لیکن تمام علاج مفت ہوگا۔ اب پنجاب میں آپ کی ایماندار حکومت ہے، یہی وجہ ہے کہ اتنے بڑے پیمانے پر ترقیاتی کام ہو رہے ہیں۔ پہلے یہ لوگ سارا پیسہ چوری کرتے تھے لیکن اب ایک ایک پیسہ عوام پر خرچ کیا جا رہا ہے۔ ہم نے صرف ڈیڑھ سال میں اتنا کام کیا ہے۔ اس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ پانچ سالوں میں کتناکام کریں گے۔ "آپ” حکومت نے اب تک پنجاب میں 37 ہزار سے زیادہ سرکاری نوکریاں دی ہیں۔ پہلے ایک بھی نوکری رشوت یا سفارش کے بغیر نہیں ملتی تھی لیکن اب پنجاب میں رشوت اور سفارش کے بغیر نوکری مل رہی ہے۔ آنے والے دنوں میں 3 سے 3.5 لاکھ نوجوانوں کو پرائیویٹ کمپنیوں میں نوکریاں ملیں گی۔ پنجاب میں کئی بڑی کمپنیاں آرہی ہیں۔ اب ان کمپنیوں کو یقین ہے کہ پنجاب میں ایماندار حکومت ہے۔آپ کے قومی کنوینر اروند کیجریوال نے کہا کہ جب ہم نے وزیر اعلیٰ تیرتھ یاترا اسکیم شروع کی تو دوسری جماعتوں نے ہمارے ساتھ بہت زیادتی کی۔ ہم نے یاترا اسکیم شروع کرکے کچھ غلط کیا ہے۔ جب ہم نے مفت بجلی فراہم کی تو بھی انہوں نے ہمارے ساتھ زیادتی کی۔ جب بھی ہم عوام کے لیے کوئی کام کرتے ہیں، یہ سب فریقین مل کر ہمیں گالیاں دیتے ہیں۔ لیکن ہمیں ان کی زیادتیوں کی کوئی فکر نہیں ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ پنجاب کے لوگ ہم پر اسی طرح محبت، اعتماد اور نعمتوں کی بارش کرتے رہیں۔ ہم سیاست میں اقتدار کے مزے لوٹنے کے لیے نہیں آئے، پیسہ کمانے کے لیے نہیں بلکہ عوام کی خدمت کے لیے آئے ہیں۔ گروجی مہاراج غریبوں اور ضرورت مندوں کی خدمت کا پیغام ہے۔ ہم اس کے مطابق کام کر رہے ہیں۔ وہ غریبوں کو علاج فراہم کرنے اور بزرگوں کو زیارت پر بھیجنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ وہ مفت بجلی اور پانی کا بندوبست کر رہے ہیں۔ ہمیں یقین ہے کہ ہم پنجاب کے عوام کے ساتھ مل کر بہت جلد پنجاب کو رنگلا پنجاب میں تبدیل کر دیں گے۔اس موقع پر پنجاب کے وزیراعلیٰ بھگونت مان نے کہا کہ آج ہم گورداسپور لوک سبھا کو 1854 کروڑ روپے کا پیکیج دے رہے ہیں۔ کسی بھی کام میں پیسہ لگانے سے پہلے ہم دیکھتے ہیں کہ لوگ اس سے کتنا فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ ہم سب سے پہلے وہ پروجیکٹ کرتے ہیں جو عام لوگوں کی زندگیوں میں بہتری لاتے ہیں۔ یہاں بس اسٹینڈ حالت بہت خراب تھی، ہم نے بابا بندہ سنگھ بہادر بس ٹرمینل شروع کر دیا ہے۔ یہاں ہر قسم کی جدید سہولیات دستیاب ہیں۔

اس سے پہلے لوگوں کو معلوم نہیں تھا کہ حکومت نے پیسہ کہاں لگایا ہے۔ کئی سڑکیں صرف کاغذوں پر موجود تھیں۔ جب ہم مرمت شدہ سڑکوں کے لیے پرانی حکومتوں کے دستی تخمینے استعمال کرتے تھے۔جب ہم نے جانچ کی تو پتہ چلا کہ 165 کروڑ روپے بچائے جا رہے ہیں۔ جب ہم نے چھیاسٹھ ہزار کلومیٹر سڑکوں کا معائنہ کیا تو پتہ چلا کہ 540 کلومیٹر سڑکوں کا کوئی وجود ہی نہیں اور برسوں سے ان کی مرمت ہوتی رہی اور یہ لوگ ان سے پیسے کھاتے رہے۔ عوام کے ٹیکس کے پیسے میں خورد برد کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ عام آدمی پارٹی ایک سوچ ہے، یہ ایک تبدیلی کا نام ہے۔ یہ تبدیلی دہلی سے شروع ہو کر پنجاب تک پہنچی اور 11 سال میں یہ ملک کی قومی پارٹی بن کر ابھری۔ حال ہی میں ہم نے پارٹی کا یوم تاسیس منایا۔ ان 11 سالوں میں عام آدمی پارٹی کی دو ریاستوں میں حکومت ہے، راجیہ سبھا کی سیٹیں، گجرات اتر پردیش میں پانچ اور گوا میں دو ایم ایل اے ہیں۔ اس پارٹی نے عام لوگوں کو سیاست میں لایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کو رنگلا پنجاب اور ملک کی نمبر ون ریاست بنانے کا خواب ہمیں سونے نہیں دیتا۔ ہم نوجوانوں کو روزگار فراہم کریں گے اور کاشتکاری کو منافع بخش بنانے میں مدد کریں گے۔ آج پنجاب میں ٹاٹا اسٹیل جیسی بڑی کمپنیاں ہیں۔یہاں آکر نوجوانوں کو روزگار مل رہا ہے۔ بہت سے نوجوان اپنی زمین پر واپس آکر کام کرنا چاہتے ہیں۔ ہم اپنے پنجاب کو ٹھیک کریں گے، تاکہ ہمارے لوگوں کو کہیں ٹھوکر نہ کھانی پڑے۔پنجاب کے وزیراعلیٰ بھگونت مان نے کہا کہ جب منیش سسودیا نے دہلی کے سرکاری اسکولوں کو بہترین بنایا تو مودی حکومت نے انہیں جیل میں ڈال دیا۔ اسی طرح ستیندر جین کو بھی سرکاری اسپتالوں میں لوگوں کا مفت علاج کرنے پر جیل بھیج دیا گیا تھا۔ پارلیمنٹ میں بی جے پی حکومت کے خلاف کھل کر بولنے والے سنجے سنگھ کو جیل بھیج دیا گیا۔ اب یہ لوگ اروند کیجریوال کو گرفتار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ یہ لوگ اروند کیجریوال کو گرفتار کریں گے لیکن ان کی سوچ کو کیسے گرفتار کریں گے۔

جب پورے ملک میں کیجریوال کی سوچ کے لوگ پیدا ہوں گے تو ہم انہیں کیسے روکیں گے؟ ہم ان گرفتاریوں سے ڈرنے والے نہیں ہیں۔ یہ زمین پر بہت سے ہیرو پیدا ہوئے ہیں۔ بی جے پی پنجاب کے خلاف اتنی ہے کہ اس نے ابھی تک 5000 کروڑ روپے سے زیادہ آر ڈی ایف کی رقم بھی نہیں دی ہے۔ اگر ہمیں وہ رقم مل جاتی تو ہم پنڈ کو پوری طرح پالش کر لیتے۔ ایسی کوئی جگہ نہیں بچی جہاں 18 فٹ سڑک نہ بن سکے۔ انہوں نے کہا کہ جب پیرا ملٹری فورس پٹھانکوٹ میں حملوں کو روکنے آئی تو مرکزی حکومت نے ہمیں 7.5 کروڑ روپے کا بل دیا۔ ہمارے گھر کا ہر دوسرا یا تیسرا آدمی فوج میں ہے لیکن پھر بھی ہمیں فوج کی خدمات حاصل کرنی پڑتی ہیں۔ پنجاب اپنے پیروں پر کھڑا ہے۔ ہم اپنی آمدنی میں بھی اضافہ کر رہے ہیں۔ہیں یہاں لوگوں کو روزگار مل رہا ہے، اسکول کھل رہے ہیں، نئے محلہ کلینک، نئے بس اسٹینڈ، تحصیلیں اور نئے کمپلیکس بن رہے ہیں۔ ان لوگوں نے کئی ٹول پلازے بند کر دیے تھے۔ ان لوگوں کا کبھی کام کرنے کا کوئی ارادہ نہیں تھا۔

Related posts

عام آدمی پارٹی کے رکن اسمبلی سنجے سنگھ نے عدالت میں تجویز پیش کی کہ دہلی میں ترقیاتی کام ایم پی فنڈ سے کرائے جائیں

Paigam Madre Watan

My resilience in the face of adversity is bestowed upon me by the universal force behind all creation.

Paigam Madre Watan

 ڈاکٹر نوہیرا شیخ کی کوشش سے حیدر آباد فرضی ووٹوں پر تاریخی کارروائی

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar