Education تعلیم

مانو میں پروفیسر سید عین الحسن کے ہاتھوں لیب کا افتتاح

وزارت الیکٹرانکس و آئی ٹی کے 95 کروڑ مالیتی پراجیکٹ کا آغاز

حیدرآباد(پی ایم ڈبلیو نیوز) پروفیسر سید عین الحسن، وائس چانسلر ، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے کل اسکول برائے ٹیکنالوجی میں اے آر / وی آر لیب اے آر /وی آر(آگمنٹیڈ ریالٹی/ ورچول ریالٹی ) میٹاورس پراجیکٹ لیب کا افتتاح کیا۔ وزارت الیکٹرانکس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی، حکومت ہند (مائیٹی) کے تعاون سے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں اس لیب کا قیام عمل میں آیا ہے۔ پروفیسر عبدالوحد ڈین ٹیکنالوجی کو 95 کروڑ روپئے مالیتی پراجیکٹ، مائیٹی نے منظور کیا تھا۔ اس لیاب کا قیام اسی پراجیکٹ کے تحت عمل میں آیا ہے۔ پروفیسر سید عین الحسن، وائس چانسلر نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہ لیب ضرورت کے مطابق تربیتی پروگرام کی تیاری اور بطور خاص ذہنی طور پر کمزور طلبہ کے لیے تربیت و نگرانی میں مدد کرے گا۔ اس منفرد لیب میں اسٹیٹ آف آرٹ ٹیکنالوجی کے ایڈوانس جی پی یوس اور ہائی پاور کمپیوٹرس شامل ہیں۔ یہ مانو کے تعلیمی معیار کے فروغ کا ثبوت ہے کہ وزارت الیکٹرانکس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی (مائیٹی) نے مانو کو یہ اہم ترین پراجیکٹ حوالے کیا۔
پروفیسر سید عین الحسن اس پراجیکٹ کے حصول کے لیے ڈین اسکول برائے ٹیکنالوجی پروفیسر عبدالواحد کو مبارکباد دی۔ پروفیسر عبدالواحد نے کہا کہ جدید تحقیق اور دریافت کے آنے والے دور میں یہ لیب ایک سہولت کار کے طور پر کام کرے گا۔

مانو لٹریری کلب کے زیر اہتمام کہانی نویسی ورکشاپ کا افتتاح


یونیورسٹی لٹریری کلب، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کی جانب سے تین روزہ ورکشاپ بعنوان’’کہانی کیسے لکھیں‘‘ کا آغاز کل ہوا۔ واضح رہے کہ ثقافتی سرگرمی مرکز یونیورسٹی کے ڈین بہبودی طلبہ کی سرپرستی میں کارکرد ہے۔ افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈین بہبودیِ طلبہ پروفیسر سید علیم اشرف جائسی نے کہا کہ طلبہ میں بے شمار صلاحیتیں موجود ہوتی ہیں۔ ان کو پہچاننے کے لیے ایک پلیٹ فارم کی ضرورت ہے۔ یونیورسٹی کی کوشش ہے کہ تمام طلبہ کو بہتر پلیٹ فارمس اور مواقع فراہم کیے جائیں۔ یونیورسٹی لٹریری کلب انھی کوششوں کا ایک حصہ ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس ورکشاپ کے ذریعے طلبہ اپنے اندر چھپے افسانہ نگار کو باہر لائیں اور اپنی اور سماج کی کہانیاں خود کہنے کی صلاحیت اپنے اندر پیدا کریں۔ڈاکٹر فیاض احمد، ہیڈ کنٹنٹ اینڈ ٹریننگ، پرتھم ایجوکیشن فائونڈیشن، نئی دہلی نے ورکشاپ کا تعارف پیش کیا۔ انھوں طلبہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ سب میں ایک تخلیق کار چھپا ہوا ہے۔ ہماری کوشش ہے کہ اسے باہر لائیں اور آپ کو اپنی صلاحیتوں سے واقف کرائیں۔ یہ ورکشاپ پرتھم ایجوکیشن فائونڈیشن کے اشتراک کے ساتھ کیا جا رہا ہے۔ پرتھم ایجوکیشن فائونڈیشن، دہلی سے آئے ہوئے ماہرین جناب عبدالحسیب، کنٹنٹ اینڈ ٹریننگ اسوسی ایٹ اور محترمہ کومل کنٹنٹ اینڈ ٹریننگ اسوسی ایٹ نے افتتاحی اجلاس میں اظہارِ خیال کیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر فیروز عالم، صدر لٹریری کلب نے کلب کی علمی و ادبی سرگرمیوں اور معراج احمد، کلچرل کوآرڈنیٹر نے ثقافتی سرگرمی مرکز کے مستقبل کے منصوبوں سے واقف کرایا۔ طلحہ منان، سکریٹری لٹریری کلب نے نظامت کے فرائض انجام دیے اور جوائنٹ سکریٹری مظہر سبحانی اور عالیہ ندا نے انتظام و انصرام کی ذمہ داری انجام دی۔

Related posts

قوّالی لوگوں کو ایک تار میں جوڑنے کا کام کرتی ہے

Paigam Madre Watan

بزمِ جامعہ کے زیرِ اہتمام تازہ واردان شعبۂ اردو کو استقبالیہ

Paigam Madre Watan

ہر صنف میں میر کی استادی نظر آتی ہے: ماہرین میر کا خطاب

Paigam Madre Watan

Leave a Comment