Delhi دہلی

گیان واپی معاملے میں عدالتی فیصلہ بلدوانی میں پولیس بربریت اور مہرولی مسجد کے انہدام کے خلاف ایس ڈی پی آئی کا جنتر منتر پر احتجاج

نئی دہلی، سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI) دہلی شاخہ کی جانب سے پارٹی لیڈر محترمہ شاہین کوثر کی قیادت میں گیان واپی معاملے میں عدالتی فیصلہ، بلدوانی میں پولیس بربریت اور مہرولی مسجد کے انہدام کے خلاف آج یہاں جنتر منتر میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ ایس ڈی پی آئی لیڈران نے مظاہرے کے دوران مطالبہ کیا کہ مرکزی حکومت اپنے ہندوتوا ایجنڈے کو ترک کرے اور سیکولر ہندوستان کو توڑنے کا کام بند کرے اور اقلیتوں کو جان بوجھ کر نشانہ نہ بنایا جائے ۔مظاہرے میں یہ مطالبہ بھی رکھا گیا کہ سپریم کورٹ اور حکومت 1991کے عبادت گاہ ( خصوصی دفعات ایکٹ ) کو نافذ کرے جس میں 1947سے پہلے موجود کسی بھی مذہب کی عبادت گاہ کو کسی دوسرے مذہب کی عبادت گاہ میں تبدیل نہیں کیا جاسکتا۔ ا س احتجاجی مظاہرے میں سینکڑوں خواتین سمیت ایس ڈی پی آئی دہلی عہدیداران اور کارکنان شریک رہے۔

Related posts

دہلی اسمبلی میں جھوٹ بول کر بی جے پی کے ممبران اسمبلی کو گمراہ کیا، اسمبلی کی توہین کا مقدمہ ہو سکتا ہے: سوربھ بھردواج

Paigam Madre Watan

ملک کے امن اور ہم آہنگی کی حفاظت کی جانی چاہئے۔سی اے اے کے ذریعے آگ سے مت کھیلیں۔ ای ٹی محمد بشیر

Paigam Madre Watan

پسماندہ طبقات کی ترقی کیلئے ذات پات کی مردم شماری کی ضرور ت ہے۔ ایس ڈی پی آئی

Paigam Madre Watan

Leave a Comment