Delhi دہلی

وزیر آتشی نے ریونیو اور ایریگیشن کنٹرول ڈپارٹمنٹ کے سینئر افسران کے ساتھ یمنا بازار اور پرانا پل علاقوں میں سیلاب کی تیاریوں کا معائنہ کیا

نئی دہلی، دہلی میں ممکنہ سیلاب کے حوالے سے کیجریوال حکومت جنگی بنیادوں پر تیاریاں کر رہی ہے تاکہ سیلاب کی صورت حال پیدا ہونے پر بھی لوگوں کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ اس سلسلے میں ریونیو منسٹر آتشی نے بدھ کو دریائے یمنا پر پرانے لوہا پل کی صورتحال اور یمنا بازار علاقے میں سیلاب کے بارے میں جانکاری دی۔متعلقہ محکموں کی تیاریوں کا جائزہ لیا۔ اس دوران محکمہ ریونیو اور محکمہ فلڈ اینڈ ایریگیشن کنٹرول کے سینئر افسران بھی موجود رہے۔ معائنہ کے دوران افسران نے وزیر ریونیو کے ساتھ اشتراک کیا کہ سیلاب سے متعلق محکموں کی تیاریاں مکمل ہیں۔ سیلاب کی صورت میں موٹر بوٹس، غوطہ خور اور طبی ٹیمیں کسی بھی کارروائی کے لیے تیار رہیں گی۔ اس کے علاوہ سیلاب کی صورت میں محکمہ ریونیو کی جانب سے ریلیف کیمپ لگانے کی تیاریاں بھی مکمل کر لی گئی ہیں۔ اس موقع پر ریونیو منسٹر آتشی نے کہا کہ پچھلے سال دہلی میں یمنا کی پانی کی سطح گزشتہ 40 سالوں میں سب سے زیادہ سطح پر پہنچ گئی تھی اور اس کی وجہ سے جمنا کے نچلے علاقوں میں سیلاب کا مسئلہ تھا۔ اسی کو مدنظر رکھتے ہوئے اس بار کیجریوال حکومت نے سیلاب کی تیاری اس سال بہت پہلے سے شروع کر دی ہے۔ تاکہ سیلاب آئے تو ہم اس سے نمٹنے کے لیے تیار رہیں اور راحت اور بچاؤ کی کارروائیاں کریں۔آتشی نے کہا کہ مانسون کے دوران شدید بارشوں کی وجہ سے ملک کے مختلف حصوں میں بادل پھٹنے جیسی صورتحال پیدا ہوتی ہے۔ اس دوران قلیل مدت میں اتنی بارش ہوتی ہے کہ سیلابی صورتحال پیدا ہوجاتی ہے۔ ایسے میں ہم نے جمنا کے بالائی علاقوں پر بھی کڑی نظر رکھی ہے۔ تاکہ دہلی حکومت سیلاب سے محفوظ رہے۔کسی بھی ممکنہ خطرے سے نمٹنے کے لیے تیار رہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سال دہلی حکومت تعینات اور تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ ممکنہ سیلاب کی صورت میں اگر کم وقت میں بھی لوگوں کو نشیبی علاقوں سے نکالنا پڑے تو حکومت اس کے لیے بھی تیار ہے۔آتشی نے کہا کہ پچھلی بار جمنا کے پانی کی سطح 208 میٹر سے اوپر گئی تھی۔ اس وقت یہ 202.6 میٹر ہے جو خطرے کے نشان سے بہت نیچے ہے۔ لیکن پھر بھی دہلی حکومت سیلاب کی صورت حال پیدا ہونے کی صورت میں بھی ہم راحت اور بچاؤ کے کام کے لیے پوری طرح تیار ہیں۔ تاکہ دہلی کے لوگوں کو کم سے کم پریشانی کا سامنا کرنا پڑے۔

Related posts

The Heera Group has embarked on a gold trading venture.

Paigam Madre Watan

آپ نے ملک کی سیاسی تبدیلی میں نوجوانوں کو شامل کرنے کے ارادے سے ‘سیاسی تبدیلی کے لیے امبیڈکر فیلوشپ’ کا آغاز کیا: اروند کیجریوال

Paigam Madre Watan

میڈیکل رپورٹ پبلک کرنا جرم، جیل انتظامیہ وزیر اعلی کیجریوال کی زندگی سے کھیل رہی ہے: سنجے سنگھ

Paigam Madre Watan

Leave a Comment

türkiye nin en iyi reklam ajansları türkiye nin en iyi ajansları istanbul un en iyi reklam ajansları türkiye nin en ünlü reklam ajansları türkiyenin en büyük reklam ajansları istanbul daki reklam ajansları türkiye nin en büyük reklam ajansları türkiye reklam ajansları en büyük ajanslar