Parwaz پرواز

کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان

کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان

تخلیق : شیخ عزیزالرحمن عزیز سلفی (سابق شیخ الحدیث جامعہ سلفیہ ،بنارس
ماخوذ : شعری مجموعہ (پرواز)


رب کاحکم ہے سب سے بالا، رب کی اونچی شان
دنیا اس کے زیر نگیںہے، لندن کیا جاپان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


آسمان میں پھیلایا تاروں کا تونے جال
چاند کو تونے حسن دیا ہے، خلقت ہے حیران
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


آسمان سے بوندیں برسیںسیپ میں بن گئیں موتی
پانی کی اک بوند میں کیسی ڈا لدی تونے جان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


گرمی نے جب دکھ پہنچایا، نازل کی برسات
پیدا کیا پھر سوکھی زمیں پر سنبل اور ریحان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


محتاجوں کو شاہ بنائے، ذرہ کرے پہاڑ
ہیچ ہیں تیرے حکم کے آگے قاروں کیا ہامان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


پَل میں تو جاں دار بنائے، پَل میں دے تو موت
توچاہے اک پل میںکر دے بستی کو ویران
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


میٹ دیا باطل کو تونے، مٹ گئے عاد ثمود
سرتابی سے حکم کی تیرے راند گیا شیطان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


تیرے ہیں سب جن و ملائک، سورج فلک پہاڑ
قدرت تیری دیکھ کے پھربھی، غافل ہے انسان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان


ہے ناچیز عزیز ؔبھی تیری، بخشش کا محتاج
اپنی طرف سے اس پر کردے رحمت کا فیضان
کیسی تیری شان، اے ربِّ رحمان

Related posts

‘اٹھّی جو گھٹاکالی کالی’

Paigam Madre Watan

’حمد رب غفور‘

Paigam Madre Watan

مبشر سعید ’فرانس‘ سے

Paigam Madre Watan

Leave a Comment